شمالی کوریاکے فوجی نے جنوبی کوریا کے فوج سے پناہ طلب کر لی

شمالی کوریاکے فوجی نے جنوبی کوریا کے فوج سے پناہ طلب کر لی

پیانگ یانگ (اے پی پی) شمالی کوریاکے ایک فوجی نے جنوبی کوریا کے فوجی سے پناہ طلب کر لی۔یون ہاپ خبر رساں ایجنسی نے جنوبی کوریا کے جنرل اسٹاف کی طرف سے جاری کردہ بیان کے حوالے سے خبر دیتے ہوئے بتایا ہے کہ شمالی کوریا کا ایک فوجی گزشتہ شام مقامی وقت کے مطابق 7 بجکر 50 منٹ پر شمالی اور جنوبی کوریا کے درمیان موجود بفر زون کو عبور کر کے جنوبی کوریا کے فوجیوں تک جا پہنچا۔بیان میں کہا گیا ہے کہ فوجی کے جنوبی کوریا کے حصے میں داخلے کے دوران کوئی جھڑپ نہیں ہوئی اور جنوبی کوریا کے فوجیوں نے شمالی کوریا کے فوجی سے پوچھ گچھ کی جس کے دوران شمالی کوریاکے ایک فوجی نے جنوبی کوریا کے فوجی سے پناہ کی خواہش کا اظہار کیا۔

واضح رہے کہ شمالی کوریاکے فوجی کی شناخت کے بارے میں کوئی معلومات فراہم نہیں کی گئیں۔ اس سے قبل اپریل 2016 کو ایک دوسرے ملک میں ایک ہی ریسٹورنٹ میں کام کرنے والے شمالی کوریا کے 12 عورتوں پر مشتمل کْل 13 باشندوں نے جنوربی کوریا کی پناہ حاصل کرنے کا اعلان کیا تھا۔اس کے بعد شمالی کوریا کے ایک جاسوس کرنل کے 2015 میں جنوبی کوریا فرار ہونے کا اعلان کیا گیا تھا اور پیانگ یانگ انتظامیہ کی سنگدلانہ سیاست سے فرار ہو کر 29 ہزار شمالی کوریا کے باشندے جنوبی کوریا میں پناہ لے چکے ہیں۔

مزید : عالمی منظر