پی ڈبلیو ڈی کا کنٹریکٹر کروڑوں روپے کی خورد برد کے الزام میں گرفتار

پی ڈبلیو ڈی کا کنٹریکٹر کروڑوں روپے کی خورد برد کے الزام میں گرفتار

لاہور(خبرنگار) قومی احتساب بیورو (نیب) لاہور نے پبلک ورکس ڈیپارٹمنٹ (PWD) کے کنٹریکٹر محمد بشیر کو پی ڈبلیو ڈی ملازمین کی ملی بھگت سے تعمیراتی منصوبوں کی مد میں بوگس بلنگ کرتے ہوئے کروڑوں کی خرد برد کرنے کے الزام میں شیخوپورہ سے گرفتار کر لیا۔ ٹی ایم اے شیخوپورہ کے مکمل کئے گئے19تعمیراتی منصوبوں پر پاک پی ڈبلیو ڈی سے بوگس بلنگ کرتے ہوئے کروڑوں روپے غبن کئے گئے۔19ایسے بوگس تعمیراتی منصوبے جن میں سڑکوں کی تعمیر، نکاسی آب اور سولنگ وغیرہ شامل ہیں ،تین حلقوں NA-134، PP-166 اور PP-169کی حدود میں منظور کئے گئے جبکہ یہ تمام منصوبے ٹی ایم اے شیخوپورہ کے ترقیاتی منصوبوں کیلئے مختص بجٹ سے مکمل کئے گئے تھے۔نیب لاہور اسی کیس میں دیگر شریک 8اہم ملزمان جن میں ,Sub Engineers,SDOs, EXENsشامل ہیں کو 5جون 2017کو گرفتار کر چکا ہے جو نیب لاہور کی تحویل میں ہیں اور دوران تفتیش انکشافات کی صورت میں کنٹریکٹر محمد بشیر کے خلاف واضح ثبوت حاصل ہونے پر ملزم کو گرفتار کیا گیا ہے۔ابتدائی طور پر نیب لاہور نے ملزمان کے خلاف شکایت کی وصولی کے بعد شکایت کے تصدیقی عمل شروع کیا گیا جس میں تمام منصوبوں کی بوگس بلنگ کا انکشاف ہوا جبکہ انکوائری کے دوران ایس ڈی او اور ایگزیکٹیو انجینئرسمیت تمام ملزمان نے نیب کے بارہا رابطہ کرنے پر بھی نیب کے روبرو پیش ہوئے نہ ہی انکوائری اور انویسٹی گیشن کا حصہ بنے۔ڈائریکٹر جنرل نیب لاہور شہزاد سلیم صاحب کی جانب سے کرپشن کیسز کو جلد از جلد نمٹانے کے واضح احکامات کو مد نظر رکھتے ہوئے نیب لاہور نے کارروائی کرتے ہوئے ملزم کنٹریکٹر محمد بشیر کو گرفتار کیا جبکہ کل احتساب عدالت کے روبرو پیش کرتے ہوئے جسمانی ریمانڈ کے حصول کی استدعا کی جائے گی۔

گرفتار

مزید : صفحہ آخر