میدان بھی حاضر ہے اور گھوڑا بھی، وزیراعظم نئے الیکشن کرائیں، عوام کس کے ساتھ ہے پتہ چل جائیگا: تحریک انصاف

میدان بھی حاضر ہے اور گھوڑا بھی، وزیراعظم نئے الیکشن کرائیں، عوام کس کے ساتھ ...
  • اسلام آباد(آئی این پی)پاکستان تحریک انصاف کے رہنماؤں اسد عمر اورفواد چودھری نے کہا ہے کہ وزیراعظم استعفیٰ دیں ،اسمبلیاں توڑیں اور نئے الیکشن کرائیں ، انہیں پتہ چل جائے گا کہ عوام کس کے ساتھ ہیں ، میدان بھی حاضر ہے اور گھوڑا بھی حاضر ہے ، وزیراعظم کو لکھی تقریر تھمائی گئی اور وہ طوطے کی طرح شروع ہوگئے ،وزیراعظم اب اجمل پہاڑی اورصولت مرزا کی صف میں کھڑے ہوگئے ہیں ، وزیراعظم کے پاس کوئی دستاویزی ثبوت نہیں ، وزیراعظم کی دھمکیاں سپریم کورٹ کو ہیں یا فوج کو؟ ملکی سلامتی کو کوئی خطرہ نہیں ، نوازشریف احتساب کے بغیر جمہوریت پر یقین رکھتے ہیں ، شریف خاندان ہر جج اور آرمی چیف کو اپنا دشمن سمجھتا ہے ، احتساب ہوگا اور منطقی انجام تک اس کو پہنچائیں گے ۔ نیشنل پریس کلب میں گزشتہ روز پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے پاکستان تحریک انصاف کے رہنما اسد عمر نے کہا کہ وزیراعظم نے کہا ہم نے خود کو احتساب کیلئے پیش کیا ،وزیراعظم نے کبھی خود کو احتساب کیلئے پیش نہیں کیا ،وزیراعظم پاناما کیس میں ملزم نمبر ایک ہے ۔انہوں نے کہا کہ وزیراعظم خوشی سے پیش نہیں ہوئے ،وزیراعظم کے پاس کوئی اور چوائس نہیں تھی ، وزیراعظم نے جے آئی ٹی کو کہا ہے کہ منی ٹریل نہیں ہے ، وزیراعظم کے پاس کوئی دستاویزی ثبوت نہیں ، وزیراعظم نے اپنی تقریر میں دھمکیاں دیں ، کیا ان کی دھمکیاں سپریم کورٹ کو ہیں یا فوج کو ؟۔ پی ٹی آئی رہنما فواد چودھری نے کہا کہ 2002میں نوازشریف کے خلاف سات کیسز کھولے گئے ، وزیراعظم کہتے ہیں اگلے سال جے آئی ٹی لگنے والی ہے ، وزیراعظم استعفیٰ دیں ، اسمبلیاں توڑیں اور الیکشن کرائیں ، وزیراعظم کو پتہ چل جائے گا کہ عوام کس کے ساتھ ہیں ، میدان بھی حاضر ہے اور گھوڑا بھی حاضر ہے ۔انہوں نے کہا کہ 13سوال جے آئی ٹی نے دئیے ، 14واں یہ ہے مٹھائی کیوں بانٹی گئی۔انہوں نے کہا کہ پہلا موقع ہے نوازشریف احتساب کے کڑے عمل سے گز ررہے ہیں ۔ فواد چودھری نے کہا کہ نوازشریف احتساب کے بغیر جمہوریت پر یقین رکھتے ہیں۔

مزید : صفحہ آخر