بلوچستان میں داعش کا کوئی نیٹ ورک نہیں ہے نہ بننے دینگے: سرفراز بگٹی

بلوچستان میں داعش کا کوئی نیٹ ورک نہیں ہے نہ بننے دینگے: سرفراز بگٹی

کوئٹہ(اے این این)صوبائی وزیر داخلہ میر سرفراز بگٹی نے کہا ہے کہ بلوچستان میں داعش کا کوئی منظم نیٹ ورک ہے نہ اسے قائم کرنے دینگے،دہشت گر دی کے خلاف جنگ اکیلے نہیں لڑسکتے ، ہمیں مل کر اس ناسور کا خاتمہ کرنا ہو گا ،بچوں کاحوصلہ دیکھ کر میری ہمت بڑھ گئی، وہ دن دور نہیں جب دہشت گرد قانون کے کٹہرے میں کھڑے یا پھر انجام کو پہنچ جائیں گے ۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے سانحہ سردار بہادر وومن یونیورسٹی کی شہداء کی یاد میں تعزیتی ریفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا،تعزیتی ریفرنس سے یونیورسٹی کی وائس چانسلر پروفیسر خسانہ جبیں اور دیگر نے بھی خطاب کیا ، تعزیتی ریفر نس میں چار سال قبل سر دار بہادر خان یونیو رسٹی کی بس میں ہو نے والے خودکش حملے کی شہید کی طالبات کو خراج عقیدت پیش کی گئی،چار سال قبل اس یو نیو رسٹی کی بس میں ہو نے والے خودکش دھماکے 14طالبات شہید جبکہ30سے زائد زخمی ہو ئے تھے،میرسرفراز بگٹی کا کہنا تھا کہ سانحہ بہادر خان یونیو رسٹی کی بس پر حملے میں ملو ث عناصر کو کیفر کردار تک پہنچایا ،دہشت گر دی کے خلاف جنگ میں ہم سب کو لڑنی ہے صر ف اکیلے نہیں لڑسکتے ،دہشت گر دی کے خلاف جنگ میں ہم نے ہز اروں جانیں قربان کی ان کا کہنا تھا بلو چستان میں داعش کی منظم نیٹ ورک نہیں ہے البتہ داعش اپنا نیٹ ورک قائم کرنا چاہتی ہے،لیکن کسی صورت اسے پاکستان میں جگہ نہیں ملے گی ،سا نحہ سردار بہادر ویمن یونیو رسٹی سانحہ کی مناسبت سے امن واک بھی کی گئی جبکہ یو نیورسٹی میں قائم شہد اء کی یاد گار پر سرفراز بگٹی نے پھو ل رکھے اور فاتحہ خوانی کی،ریفرنس سے خطاب کر تے ہو ئے یونیو رسٹی کی وائس چانسلر پر وفیسر رخسانہ جبین کا کہناتھا کہ شہید اکاخون رائیگا نہیں جا ئیگا، میں ان والدین کو سلام پیش کر تی ہو ں جہنوں اپنی بچیوں کو اس سانحہ کھویا مگر اس کے باجود بھی ان کے حوصلے پست نہیں ہو ئے۔

مزید : کراچی صفحہ اول