آڈٹ انسپکٹر کی افسروں کیخلاف اقدام قتل کی درخواست بے بنیاد قرار‘ داخل دفتر کردی گئی

آڈٹ انسپکٹر کی افسروں کیخلاف اقدام قتل کی درخواست بے بنیاد قرار‘ داخل دفتر ...

ملتان(نیوز رپورٹر) تھانہ بی زیڈ میں درخواست دیتے ہوئے آڈٹ انسپکٹر نوید اصغر میاں نے موقف اپنایا ہے کہ ان کی گاڑی پر حملہ کرکے گاڑی کی سکرین توڑ دی گئی ہے جس سے مراد کہ ان پر قاتلانہ حملہ کیا گیا ہے جس میں اے سی ہیڈ کوارٹر عابد(بقیہ نمبر49صفحہ12پر )

گلشن،ان لینڈ ریونیو آفیسر کرامت حسین،پروٹوکول آفیسر یوسف شاہ،یونین صدر ملک نوید اعوان،ارشد خان ترین اور راؤ محمد عرفان ملوث ہیں جس کی ابتدائی تحقیقات کے بعد پولیس نے بے بنیاد قرار دیتے ہوئے درخواست داخل دفتر کردی ہے جس کے ردعمل میں پروٹوکول آفیسر یوسف شاہ نے تھانہ کینٹ میں نوید اصغر میاں کے خلاف خوف و ہراس پھیلانے اور افسران کو بلیک میل کرنے پر مقدمہ زیر دفعہ506،334درج کرادیا ہے یونین عہدیداران کے مطابق ایڈیشنل ڈائریکٹر انٹرنل آڈٹ ظفر فاروقی،آڈٹ آفیسر نوید میاں کی نہ صرف پشت پناہی کررہے ہیں بلکہ پردہ پوشی میں مصروف ہیں انہوں نے بتایا کہ نوید اصغر میاں31مئی سے2جون2017ء تک بغیر درخواست کے غیر حاضر رہے لیکن ظفر فاروقی کے منظور نظر ہونے کے باعث آفس ریکارڈ میں حاضر دکھائے گئے ہیں جوکہ محکمانہ قواعد کی سخت خلاف ورزی ہے آر ٹی او حکام کو اس کا سخت نوٹس لینا چاہیے۔

مزید : ملتان صفحہ آخر