صادق آباد‘ انتظامیہ کا ٹرانسپورٹرز کو نئے بس سٹینڈ میں منتقلی کیلئے آپریشن ‘ احتجاج

صادق آباد‘ انتظامیہ کا ٹرانسپورٹرز کو نئے بس سٹینڈ میں منتقلی کیلئے آپریشن ...

صادق آباد(نامہ نگار،تحصیل رپورٹر) صادق آباد میں تیار ہونے والے جنرل بس اسٹینڈ کو فعال کرنے کیلئے پرانے بس اڈے کے ٹرانسپوٹرز کو منتقل کرنے کیلئے ڈپٹی کمشنر رحیم یارخان کی جانب سے دی گئی ڈیڈ لائن کا گزشتہ روز آخری دن تھا ڈپٹی کمشنر رحیم یارخان سقراط امان رانا کے احکامات پر اسسٹنٹ کمشنر صادق آباد عباس رضاناصر کی قیادت میں سیکرٹری آرٹی اے ریاست علی پولیس،بلدیہ صادق آباد کے(بقیہ نمبر46صفحہ7پر )

اہلکاروں اور ٹریفک پولیس کے اہلکاروں کے ہمراہ اڈے پر پہنچے انھوں نے مائیکرو فون کے ساتھ اعلانات کیئے کہ ٹرانسپوٹرز از خود بسوں کو نکال کر نئے بس اڈے میں لے جائیں بصورت دیگر ان بسوں کے ٹائروں کی ہواا نکال دی جائے گیاانتظامیہ کے اعلان کے بعد ٹرانسپوٹرز ،اڈہ کے تاجروں،اور بسوں پر کام کرنے والے عملہ و ورکشاپوں کے مالکان نے احتجاج شروع کردیا ٹرانسپوٹرز کی قیادت افضل وڑائچ،چوہدری اقبال گجر،چوہدری اعجاز وڑائچ،چوہدری عادل وڑائچ،چوہدری عظیم کمبوہ،چوہدری امجد فاروق،چوہدری محمد یٰسین،چوہدری عدنان وڑائچ ،چوہدری افضال وڑائچ،چوہدری بلا ل اصغر وڑائچ،چوہدری خالد بشیر ننھا سمیت دیگر نے احتجاج کرتے ہوئے کہا کہ انتظامیہ ہم سے ایسی جگہ شفٹ ہونے کا کہہ رہی ہے جس اڈے میں نہ تو اسٹینڈ بنے ہیں نہ ہی مسافروں کے بیٹھنے کیلئے مسافر خانہ اور پینے کیلئے پانی میسرنہ ہے انھوں نے کہاکہ انتظامیہ ہمیں مہلت دے اور نئے جنرل بس اسٹینڈ میں سہولیات فراہم کرے نعرے لگائے گئے بعدا زاں ٹرانسپوٹرز نے اسسٹنٹ کمشنر اور سیکرٹری آرٹی اے کے ساتھ مزاکرات کی کوشش کی مگر انتظامیہ نے ایک نہ سنی احتجاج کا پتہ چلنے پر ایس ڈی پی او مہر ناصر سیال ثاقب اور ایس ایچ او سٹی صفدر اقبال سندھو بھی موقع پر پہنچ گئے اور اپنی نگرانی میں تمام بسوں کو اڈے سے باہر نکال دیا مگر ٹرانسپوٹرز نے اپنی بسوں کو نئے اڈے میں نہ جانے دیا اور اپنے گھروں اور ورکشاپوں میں کھڑی کردیں دوسری جانب انتظامیہ نے پرائیویٹ اڈوں کو بھی بند کردیا اور سب کو سیل کرکے پولیس کی نفری بھی بٹھا دی قبل ازیں اسسٹنٹ کمشنر عباس رضاناصر،اور سیکرٹری آرٹی اے ریاست علی نے کہاکہ اڈے میں جو سہولیات کی کمی ہے اسے فراہم کریں گے۔

مزید : ملتان صفحہ آخر