جے آئی ٹی میں وزیراعظم کی پیشی تحریک انصاف کی جدوجہد کا نتیجہ ہے: اپوزیشن رہنما

جے آئی ٹی میں وزیراعظم کی پیشی تحریک انصاف کی جدوجہد کا نتیجہ ہے: اپوزیشن ...

ملتان(نیورز رپورٹر) وزیر اعظم میاں نواز شریف کی پانامہ لیکس اور دیگر متنازعہ مالیاتی ایشوز کے سلسلہ میں جے آئی ٹی کے سامنے پیشی پر اپوزیشن کے مقامی رہنماؤں نے سخت ہدف تنقید بنایا ہے جبکہ حکومتی رہنماؤں نے اس عمل کو قانون کی بالا دستی اور پاسداری قرار دیا ہے تحریک انصاف کے ضلعی صدر اعجاز حسین جنجوعہ اور سٹی صدر ڈاکٹر خالد خان خاکوانی نے کہا ہے کہ وزیر اعظم اگر مستعفیٰ ہو کر پیش ہوتے تو زیادہ بہتر تھا اور جے آئی ٹی کی ٹیم آزادانہ ان(بقیہ نمبر27صفحہ12پر )

ایشوز پر تفتیش کرسکتی تھی جس پر باقاعدہ میاں نواز شریف یوسف رضا گیلانی سے عمل کرواچکے ہیں ایک 18ویں گریڈ کا آفیسر وزیر اعظم سے کیسے تفتیش کرسکتا ہے اس تمام صورتحال کے باوجود ہمیں جے آئی ٹی اور سپریم کورٹ پر مکمل اعتماد ہے عمران خان اور اس کی ٹیم کی جدو جہد ہے کہ آج وزیر اعظم انصاف کے کہٹرے میں کھڑا ہوا ہے پیپلز پارٹی کے رہنما خواجہ رضوان عالم نفیس انصاری نے کہا کہ بحثیت وزیر اعظم جے آئی ٹی میں پیشی پوری دنیا میں رسوائی کے سوا کچھ نہیں ہوا پوری قوم کا سر شرم سے جھک گیا ہے حکومت نے ڈرامہ کیا ہے کہ پاکستان کا وزیر اعظم مالیاتی کرپشن کے سلسلہ میں جے آئی ٹی کے وربرد پیشی دے رہا ہے کیا ایسے بنے گا دنیا میں ہمارے حکمرانوں کا پی پی پی کے سابق رکن صوبائی اسمبلی عثمان بھٹی نے کہا ہے کہ ایک ادنیٰ سے ملازم پر بھی جب الزام لگ جاتا ہے تو پہلے مرحلے میں اسے معطل کیا جاتا ہے بعد میں اس کی انکوائری کی جاتی ہے لیکن اس اہم ایشو پر سپریم کورٹ کو چاہیے تھا کہ وہ وزیر اعظم کو مستعفیٰ ہونے کی ہداکت کرتی ایک با اقتیدار وزیر اعظم سے جے آئی ٹی کے 18گریڈ کے ملزمین کیا تفتیش کریں گے ماضی میں وزیر اعظم گیلانی کے خلاف جاروانے آئین فیصلے کیے گئے لیکن پیپلز پارٹی نے عدالتوں کے باہرکھڑے ہو کر دھمکیاں نہیں دیں آج جو رانا ثناء اللہ نے بدتمیزی پر مبنی گفتگو کی ہے وہ شرمناک ہے ۔ ملک عاصم ڈہیڑ اور وسیم خان بادوزئی نے کہا کہ عمران خان نے قومی خزانے کی لوٹ مار میں ملوث حکمرانوں کو عدالت کے کہٹرے میں لا کھڑا کیا ہے تحریک انصاف کا روز اول سے مطالبہ تھا کہ وزیر اعظم مستعفیٰ ہو کر عدالتوں کا سامنا کر کے اپنی صفائی پیش کریں لیکن ایسا نہیں کیا گیا لیکن وقت ثابت کرئے گا کہ فیصلہ ایک خاندان کے حق میں کیا گیا ہے کہ پاکستان کے حق میں حکومتی جماعت کے رہنماؤں حاجی احسان الدین قریشی، شیخ محمد طارق رشید، اور ڈپٹی میئر منور احسان قریشی نے کہاکہ وزیر اعظم میاں نواز شریف نے قانون کی حکمرانی کو نہ صرف تسلیم کیا ہے بلکہ جے آئی ٹی میں پیش ہو کر ایک تاریخ رقم کر دی ہے وزیر اعظم نے اپنے عمل سے ثابت کردیا ہے کہ قانون سے کوئی بالا تر نہیں ہے اور یہ آئندہ نسلوں کیلئے بھی ایک مثال بن جائے گی کہ انصاف کے کہٹرے میں سب یکساں ہیں

مزید : ملتان صفحہ آخر