’شادی کی تاریخ رکھنی ہو تو اس دن کا انتخاب کرنا چاہیے جب چاند۔۔۔‘ معروف جادوگرنی نے شادی کی تیاریاں کرنے والے جوڑوں کو انتہائی حیران کن مشورہ د دیا

’شادی کی تاریخ رکھنی ہو تو اس دن کا انتخاب کرنا چاہیے جب چاند۔۔۔‘ معروف ...
’شادی کی تاریخ رکھنی ہو تو اس دن کا انتخاب کرنا چاہیے جب چاند۔۔۔‘ معروف جادوگرنی نے شادی کی تیاریاں کرنے والے جوڑوں کو انتہائی حیران کن مشورہ د دیا

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

کنبرا(مانیٹرنگ ڈیسک) ’جادوگرنی‘ کا لفظ آتے ہی ذہن میں کسی خوفناک شکل والی چڑیل نما خاتون کا خاکہ ابھرتا ہے، لیکن آج جدید دور میں جادوگرنیاں بھی شاید ترقی کر گئی ہیں اور ویسا بدشکل رہنا ان کے لیے لازم نہیں رہا، جیسا کہ آسٹریلیا کی یہ 52سالہ مارا کارٹر نامی جادوگرنی ہے۔مارا کارٹر نے اپنے جادو کے ذریعے کئی چیزوں کے متعلق بتایا ہے، جیسا کہ بال کٹوانے کے لیے بہترین وقت کون سا ہوتا ہے، شادی کے لیے بہترین وقت کون سا ہوتا ہے؟ وغیرہ وغیرہ۔ اس کے پاس جادو کی ایک کتاب بھی ہے جس میں منتر لکھے ہوئے ہیں اور ایک بڑا سا جھاڑو بھی ہے جو اس کے بقول منتر میں کام آتا ہے۔

’شادی کے 21 سال بعد اب پہلی مرتبہ اپنی بیگم کو ہنی مون پر لے کر جارہا ہوں کیونکہ۔۔۔‘ آدمی نے ایسی بات کہہ دی کہ جان کر آپ کی آنکھوں میں بھی آنسو آجائیں گے

میل آن لائن کی رپورٹ کے مطابق مارا کارٹر نے شادی کی تیاریاں کرتے جوڑوں کو حیران کن مشورہ دیتے ہوئے بتایا ہے کہ ”شادی کے لیے چاند کی ابتدائی تاریخیں، جب چاند بالکل نیا اور چھوٹا ہوتا ہے، بہترین ہیں۔“ اس کی وجہ بیان کرتے ہوئے اس کا کہنا تھا کہ ” چاند پانی پر حکومت کرتا ہے، سمندر میں جواربھاٹا چاند کی وجہ سے ہی آتا ہے۔ پانی صرف سمندر میں ہی نہیں دنیا کی ہر چیز میں ہے، خودہمارے جسم کا بڑا حصہ بھی پانی پر مشتمل ہے۔ لہٰذا چاند ہمارے اجسام پر بھی اثرانداز ہوتا ہے۔ چاند کی ابتدائی تاریخوں میں پانی پرسکون رہتا ہے لہٰذا شادی کروانے اور بال کٹوانے، دونوں کاموں کے لیے یہ بہترین دن ہوتے ہیں۔“

مزید : ڈیلی بائیٹس