افغانستان میں پچھلی غلطیاں نہیں دہرائیں گے:امریکی وزیر دفاع

افغانستان میں پچھلی غلطیاں نہیں دہرائیں گے:امریکی وزیر دفاع
افغانستان میں پچھلی غلطیاں نہیں دہرائیں گے:امریکی وزیر دفاع

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

واشنگٹن(این این آئی)امریکی وزیر دفاع جیمز میٹس نے کہا ہے کہ ٹرمپ انتظامیہ افغانستان میں واشنگٹن کی ماضی کی غلطیاں نہیں دہرائے گی۔

اسرائیلی فوجی کیمپ میں طاعون کی شکل کی وبا پھوٹ پڑی ،120 فوجی افسر اور اہلکار متاثر

میڈیارپورٹس کے مطابق امریکی وزیر دفاع جیمز میٹس نے اس عزم کا اظہار کیا کہ امریکی صدور کے ادوار میں ہندو کش کی اس ریاست میں واشنگٹن کی پالیسیوں میں کی جاتی رہی ہیں وہ اب دوبارہ نہیں دہرائی جائیں گی۔اپنے پیش رو صدر باراک اوباما کے مقابلے میں، جن کے دور اقتدار میں افغانستان میں امریکی فوجی دستوں کی ہر تعیناتی یا انخلاء کا وائٹ ہاؤس کی طرف سے بغور اور بہت تنقیدی جائزہ لیا جاتا تھا، ڈونلڈ ٹرمپ نے اس سلسلے میں فیصلہ سازی ملکی محکمہ دفاع یا پینٹاگون کے ان اعلیٰ ترین رہنماؤں کے سپرد کر دی ہے، جن میں وزیر دفاع کے علاوہ وہ فوجی کمانڈر بھی شامل ہیں، جنہیں ٹرمپ بڑے شوق سے ’میرے جنرل‘ کہتے ہیں۔ڈونلڈ ٹرمپ جب سے صدر بنے ہیں، انہوں نے افغانستان سے متعلق اپنی انتظامیہ کی پالیسی کے بارے میں بہت ہی کم بات کی ہے۔

مزید : بین الاقوامی