دبئی میں نوجوان لڑکی کے پیٹ میں درد، ڈاکٹر نے دیکھا تو سیدھا پولیس سٹیشن پہنچادیا کیونکہ۔۔۔

دبئی میں نوجوان لڑکی کے پیٹ میں درد، ڈاکٹر نے دیکھا تو سیدھا پولیس سٹیشن ...
دبئی میں نوجوان لڑکی کے پیٹ میں درد، ڈاکٹر نے دیکھا تو سیدھا پولیس سٹیشن پہنچادیا کیونکہ۔۔۔

  

دبئی سٹی (مانیٹرنگ ڈیسک) متحدہ عرب امارت میں مقیم ایک فلپائنی لڑکی کو پیٹ میں شدید درد اٹھنے پر ہسپتال لیجایا گیا تو انکشاف ہوا کہ وہ حاملہ تھی، لیکن یہ انکشاف خوشی کی بجائے لڑکی اور اس کے ساتھی نوجوان کیلئے بہت بڑی مصیبت کا سبب بن گیا۔

گلف نیوز کی رپورٹ کے مطابق 28 سالہ فلپائنی لڑکی کیلئے پہلی بری خبر تو یہ تھی کہ ابنارمل حمل کے باعث بچے کی پیٹ میں ہی موت ہوچکی تھی، جسے آپریشن کرکے نکالا گیا۔ اس کیلئے مزید پریشانی کا آغاز اس وقت ہوا جب اس کے خاوند کے بارے میں سوال کیا گیا۔ لڑکی کا کہنا تھا کہ وہ شادی شدہ نہیں ہے البتہ اس کی منگنی ہوچکی ہے۔ متحدہ عرب امارات کے قانون کے مطابق اس کا یہ بیان اعتراف جرم تھا کہ وہ شادی کے بغیر جسمانی تعلق استوار کرچکی تھی۔

’میں اپنے شوہر سے بے حد پیار کرتی تھی، لیکن جب عیسائیت چھوڑ کر اسلام قبول کرنے کا فیصلہ کیا تو وہ کہنے لگا ۔۔۔‘ 20 سال کی شادی کے بعد خاتون نے اسلام قبول کرنے کیلئے ایسی بے مثال قربانی دے ڈالی کہ جان کر ہر مسلمان کا ایمان تروتازہ ہوجائے

یہ معاملہ سامنے آنے پر لڑکی اور اس کے 27سالہ فلپائنی منگیتر کو گرفتار کرلیا گیا۔ عدالت نے انہیں تین ماہ قید اور ملک بدری کی سزا سنائی، تاہم ان کے وکیل نے موقف اختیار کیا کہ فلپائن میں دونوں کی شادی ہوئی تھی لیکن اسے رجسٹر کروانے اور متحدہ عرب امارات کے متعلقہ حکومتی ادارے کو اس کی نقل فراہم کرنے میں تاخیر ہوگئی۔ ملزمہ کے وکیل نے فلپائن میں ہونے والی شادی کے سرٹیفکیٹ کی نقل بھی عدالت کو فراہم کی اور درخواست کی کہ ملزمہ اور اس کے ساتھی مرد کو بے گناہ قرار دے کر باعزت بری کیا جائے۔ عدالت کی جانب سے اس درخواست پر تاحال کوئی فیصلہ نہیں سنایا گیا تاہم مقدمے کی کارروائی جاری ہے۔

مزید : عرب دنیا