خیبر پختونخوا حکومت کی عدم توجہ، پشاور میں دلیپ کمار کا آبائی گھر منہدم

خیبر پختونخوا حکومت کی عدم توجہ، پشاور میں دلیپ کمار کا آبائی گھر منہدم
خیبر پختونخوا حکومت کی عدم توجہ، پشاور میں دلیپ کمار کا آبائی گھر منہدم

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

پشاور / ممبئی (ڈیلی پاکستان آن لائن) بالی ووڈ کے ٹریجڈی کنگ دلیپ کمار کا پشاور میں واقع آبائی گھر خیبر پختونخوا حکومت کی جانب سے عدم توجہی کا شکار ہونے کے باعث منہدم ہو گیا۔حکام کا کہنا ہے کہ جلد ہی دلیپ کمار کے آبائی گھر کو بحال کرلیا جائے گا ، عدم توجہی کے باعث گھر کا صرف داخلی حصہ اور دروازہ متاثر ہوئے ہیں۔

پاکستان کے انگریزی روزنامے دی نیوزکے مطابق بالی ووڈ اداکار یوسف خان عرف دلیپ کمار کی پیدائش پشاور میں قصہ خوانی بازار کے قریب محلہ خدا داد میں ہوئی تھی۔ تقسیم ہند کے وقت وہ بھارت منتقل ہوگئے تھے جبکہ ان کا آبائی گھر محکمہ آثار قدیمہ کی جانب سے 2014 میں ثقافتی ورثہ قرار دیا گیا تھا۔

سلمان خان سائیکل اٹھا کر ممبئی کی سڑکوں پر نکل آئےاور جب وہ شاہ رخ خان کے گھر کے پاس سے گزرے تو ایسی آوازیں لگا دیں کہ دیکھنے والے دنگ رہ گئے

ثقافتی ورثہ کونسل کے جنرل سیکرٹری شکیل وحید اللہ کا کہنا ہے کہ ان کی جانب سے خیبر پختونخوا حکومت کو 6 بار درخواستیں دی گئی تھیں تاکہ دلیپ کمار کے آبائی گھر کی مخدوش صورتحال کو بہتر بنایا جا سکے لیکن حکومت کی جانب سے کوئی جواب نہیں دیا گیا۔ گھر کی موجودہ صورتحال کے حوالے سے دلیپ کمار کی اہلیہ سائرہ بانو کو آگاہ کیا گیا تو انہوں نے انتہائی افسوس کا اظہار کیا۔ انہوں نے کہا کہ حکومت کی عدم توجہی کے باعث 100 سال پرانا یہ گھر لگ بھگ منہدم ہو چکا ہے۔

دوسری جانب محکمہ آثار قدیمہ و عجائب گھروں کے ڈائریکٹر عبدالصمد کا کہنا ہے کہ خیبر پختونخوا کے تحفظ آثار قدیمہ ایکٹ 2016 کے تحت دلیپ کمار کے گھر کی ہو بہو نقل تیار کی جائے گی۔

مزید : تفریح