بجلی چوری کیس میں گواہی نہ دینے پر ایس ڈی او امین پارک اور ایف آئی اے انسپکٹرز سمیت 9 گواہوں کی گرفتاری کا حکم

بجلی چوری کیس میں گواہی نہ دینے پر ایس ڈی او امین پارک اور ایف آئی اے انسپکٹرز ...
بجلی چوری کیس میں گواہی نہ دینے پر ایس ڈی او امین پارک اور ایف آئی اے انسپکٹرز سمیت 9 گواہوں کی گرفتاری کا حکم

  

لاہور(نامہ نگار)ایف آئی اے اور لیسکو افسروں نے بجلی چوروں کے خلاف گواہی کے لئے عدالتوں میں پیش ہونا چھوڑ دیا، عدالت نے بجلی چوری کیس میں گواہی نہ دینے پر ایس ڈی او امین پارک اور ایف آئی اے سمیت 9 گواہوں کی گرفتاری کا حکم دے دیا ہے۔

تھانوں میں دربدر کی ٹھوکریں ،شہریوں کا اندراج مقدمہ کے لئے عدالتوں کا رخ

جوڈیشل مجسٹریٹ فاروق اعظم سوہل نے حاجی فرزند علی کے خلاف درج مقدمہ کی سماعت کی ، ملزم کے وکیل نے موقف اختیار کیا کہ ایف آئی اے نے لیسکو حکام کی ملی بھگت سے ملزم کو بجلی چوری کے مقدمہ میں بے بنیاد ملوث کیا اور مقدمہ کے گواہ پیش نہ ہونے سے مقدمہ التواءکا شکار ہے ، ملزم کے وکیل نے مزید موقف اختیار کیا کہ لیسکو کے ایس ڈی او امین پارک محمد عظیم،لائن مین امین پارک محمد یونس ،لیسکو فسٹ سرکل میکلوڈ روڈ کے ٹیکنیکل اسسٹنٹ فیاض احمد اور فیاض بیگ بجلی چوری مقدمہ میں پراسکیوشن کے گواہ ہیں جبکہ ایف آئی اے انسپکٹر ناصر محمود اعوان ، انسپکٹر ہارون ملک ، سب انسپکٹر حمید اللہ، ہیڈ کانسٹیبل محمد عاشق ، کانسٹیبل انوار حسین ہاشمی بھی مقدمہ میں گواہ ہیں اور عدالتی حکم پر گواہی کے لئے پیش نہیں ہو رہے ،ملزم کے خلاف درج مقدمہ میں ناکافی شواہد کی بنیاد پر ملزم کو بری کیا جائے، عدالتی حکم پر تعمیل کنندہ نے رپورٹ پیش کرتے ہوئے بتایا کہ پراسکیوشن کے گواہوں کو عدالتی حکم سے متعلق بروقت آگاہ کیا جا چکا ہے جس پر عدالت نے کیس کی مزید کارروائی 15جولائی تک ملتوی کرتے ہوئے بجلی چوری کیس میں گواہی نہ دینے پر ایس ڈی او امین پارک اور ایف آئی اے سمیت 9 گواہوں کی گرفتاری کا حکم دے دیا ہے۔

مزید : لاہور