آن لائن کلاسز کے نام پر طلبہ کے مستقبل کا استحصال بند کیاجائے، فہیم بٹ

آن لائن کلاسز کے نام پر طلبہ کے مستقبل کا استحصال بند کیاجائے، فہیم بٹ

  

لاہور(پ ر)وزارتِ تعلیم اور HECآن لائن کلاسز کے نام پر طلبہ کے مستقبل کا استحصال بند کرے، اس وقت ملک کے سینکڑوں طلباء آن لائن کلاسز لینے سے محروم ہیں لیکن اس کے باوجود ان سے فیس لی جا رہی ہے جو تعلیم دشمنی کے زمرے میں آتا ہے،پنجاب اسمبلی میں متنازعہ کتب پر پابندی کے حوالے سے قانون سازی کرنے پر چوہدری پرویز الٰہی اور علماء بورڈ کو خراج تحسین پیش کرتے ہیں،تعلیمی بجٹ میں اضافہ وقت کی اہم ضرورت ہے۔ ان خیالات کا اظہار مسلم سٹوڈنٹس آرگنائزیشن لاہور کے ناظم اطلاعات فہیم بٹ نے مسلم میڈیا سیل سے جاری بیان میں کیا۔

مسلم سٹوڈنٹس آرگنائزیشن ضلع لاہور کے ناظم اطلاعات نے کہاہے کہ عالمی وبا کرونا کے موقع پر آن لائن تعلیم صرف فیسوں کے حصول،طلبہ اور انکے والدین کو مطمئن کرنے کے سوا کچھ نہیں جب تک آن لائن ایجو کیشن کو موثر نہیں بنایا جاتا تب تک اسکا کوئی فائدہ نہیں یہ طلبہ کے مستقبل کے ساتھ کھلواڑ ہے اس حوالے سے وزارت تعلیم عملی اقدامات اٹھائے،تعلیمی بجٹ میں اضافہ وقت کی اہم ضرورت ہے۔

لیکن افسوس ہے کہ پاکستان میں ایسا ممکن ہی نہیں ہے،وزارتِ تعلیم پاکستان ایس او پیز کے تحت تعلیمی ادارے کھولنے کا اعلان کریں اور فی الفور طلبا کی سمسٹر فیس معاف کرنے کا اعلان کرے انکا مزید کہنا تھا کہ حالیہ دنوں پنجاب اسمبلی نے مقدس شخصیات بارے متنازعہ کتب پر پابندی عائد کی جو کہ خوش آئندہے اوریہ قانون ملکی امن کے لئے سنگ میل ثابت ہوگا،پنجاب اسمبلی کی جانب سے گستاخانہ مواد روکنے اور شان رسالتؐ و عقیدہ ختم نبوت ﷺ بارے مواد شامل کرنے کا بل منظور کرنے پر اراکین اسمبلی مبارک باد کی مستحق ہیں۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -