2انڈین اہلکار گرفتار، مقدمہ درج، سفارتی استثنی پر رہا

        2انڈین اہلکار گرفتار، مقدمہ درج، سفارتی استثنی پر رہا

  

اسلام آباد، نئی دہلی (سٹاف رپورٹر، مانیٹرنگ ڈیسک) پاکستان میں بھارتی ہائی کمیشن کی گاڑی کی ٹکر سے ایک شہری شدید زخمی ہو گیا جس کے بعد کمیشن کے دو اہلکاروں کو حراست میں لے کر مقدمہ درج کر لیا گیا،تاہم سفارتی استثنیٰ کی بدولت دونوں ملزم اہلکاروں کو رہا کر دیاگیا۔سفارتی اہلکاروں کی گرفتاری کی اطلاع ملنے پر نئی دہلی میں بھارت کی حکومت نے پاکستانی ناظم الامور کووزارت خارجہ طلب کر کے اہلکاروں کی گر فتا ر ی پر احتجاجی مراسلہ تھما دیا جس میں دونوں اہلکاروں کو گاڑی سمیت رہا کرنے کا مطالبہ کیا گیا۔تفصیلات کے مطابق بھارتی ہائی کمیشن کے اہلکار صبح اسلام آباد میں اپنی سیاہ رنگ کی بی ایم ڈبلیو گاڑی کو تیز رفتاری سے ڈرائیو کر رہے تھے کہ بے قابو ہو کر فٹ پاتھ پر چڑھ گئی جس کے نتیجے میں ایک راہگیر زخمی ہو گیا۔دونوں بھارتی ہائی کمیشن کے ملزم اہلکاروں نے موقع سے فرار ہونے کی کوشش کی تاہم وہاں موجود شہریوں نے ان کے فرار کی کوشش ناکام بنا دی اور پکڑ کر پولیس کے حوالے کر دیا۔ذرائع کے مطابق بھارتی ہائی کمیشن کے اہلکاروں کے نام سلواڈیس پال اور دوامو گراہمو ہیں اور ان کی گاڑی سے ٹکر سے زخمی ہونیوالی شہری کی حالت نازک ہے، جسے فوری طور پر ہسپتال منتقل کر دیا گیا۔اسلام آباد پولیس نے بھارتی سفارتکاروں کیخلاف مقدمہ درج کر لیا ہے اور مقدمہ شہری کو کچلنے کے بعد فرار ہونے کی دفعہ کے تحت درج کیا گیا ہے۔ایک بھارتی اہلکار سے 10 ہزار روپے کی جعلی پاکستانی کرنسی نکلی جس کے بعد ایف آئی آر میں جعلی کرنسی کی دفعات بھی شامل کردی گئی ہیں۔دوسری جانب بھارتی ہائی کمیشن نے اپنے دو اہلکاروں کی گمشدگی کا اعلامیہ جاری کرتے ہوئے کہا کہ دو اہلکار صبح 8بج کر 32منٹ پر ہائی کمیشن سے باہر نکلے لیکن یہ دونوں اہلکار تاحال اپنی منزل تک نہیں پہنچ سکے۔تھانہ سیکرٹریٹ میں دونوں اہلکاروں کی حراست کی اطلاع پر بھارتی ہائی کمیشن کے سینئر حکام پہنچے اور تھانے پہنچ کر بھارتی سینئر سفارتکاروں نے ایس ایچ او کو گمشدگی کا خط تھما دیا۔خط کے متن میں کہا گیا کہ وفاقی پولیس ہمارے گمشدہ اہلکاروں کو تلاش کرے۔ادھر ذرائع نے بتایا کہ بھارتی ہائی کمیشن کے دو اہلکاروں کو ہائی کمیشن کے سفا ر تی عملے کے حوالے کر دیا گیا۔ ذرائع نے بتایا کہ بھارتی ہائی کمیشن کے اہلکاروں کو سفارتی استثنیٰ کی وجہ سے رہا کیا گیا۔دوسری جانب بھارت نے پاکستان میں ہائی کمیشن کے دو اہلکاروں کو حراست میں لیے جانے پر پاکستانی ناظم الامور کو طلب کر کے احتجاج کیا۔بھارتی میڈیا کے مطابق بھارت میں پاکستانی ناظم الامور سید حیدر شاہ کو طلب کر کے اپنے ہائی کمیشن کے دو افراد کی گرفتاری پر احتجاج ریکارڈ کرایا گیا۔بھارتی وزارت خارجہ نے مطالبہ کیا کہ دونوں اہلکاروں کو گاڑی سمیت ہائی کمیشن کو فوری طور پر واپس کیا جائے۔وزارت خارجہ نے ناظم الامور کو باور کرایا کہ بھارتی ہائی کمیشن کے اہلکاروں کی حفاظت اور سکیورٹی کی مکمل ذمے داری پاکستان پر عائد ہوتی ہے۔

بھارتی اہلکار

مزید :

صفحہ اول -