آئی جی کی سی سی پی او لاہور کو کارکردگی بہتر بنانے کی ہدایت

آئی جی کی سی سی پی او لاہور کو کارکردگی بہتر بنانے کی ہدایت

  

لاہور(کرائم رپورٹر)(لاہور پولیس کی کارکردگی کا یکم جون کو ہونے والی آر پی او ویڈیو لنک کانفرنس میں پول کھل گیا، آئی جی پنجاب شعیب دستگیر لاہور پولیس کی کارکردگی سے ناخوش، سی سی پی او لاہور ذوالفقار حمید کو کارکردگی مزید بہتر بنانے کی ہدایت، روزنامہ پاکستان آر پی او ویڈیو لنک کانفرنس کی اندرونی کہانی سامنے لے آیا، آئی جی پنجاب شعیب دستگیر کی زیر صدارت یکم جون کو آر پی اوز ویڈیو لنک کانفرنس ہوئی جس میں سی سی پی او لاہور،آر پی اوزاور دیگر فیلڈ افسران نے بذریعہ ویڈیو لنک کانفرنس شرکت کی، آر پی او ویڈیو لنک کانفرس کے مندرجات کے مطابق آئی جی پنجاب شعیب دستگیر کو سی سی پی او ذوالفقار حمید کی جانب سے لاہور پولیس کی پانچ ماہ کی کارکردگی رپورٹ پیش کی گئی جس کے مطابق قتل کے 135مقدمات درج کئے گئے جس میں 32مقدمات کے چالان عدالتوں میں مکمل کرکے پیش کئے گئے۔

، گزشتہ سال 111مقدمات درج ہوئے 55چالان عدالتوں میں پیش کئے گئے تھے، ڈویژنل انویسٹی گیشن ایس پیز نامکمل اور منسوخ مقدمات کی خود مانیٹرنگ کریں، رواں سال پانچ ماہ کے دوران 12ڈکیتی قتل ہوئے جس میں 9 مقدمات کے چالان مکمل کرکے عدالتوں میں بھجوا دئیے گئے تین مقدمات زیر تفتیش ہیں، ڈکیتی کے مقدمات میں 208ملزمان میں سے 118گرفتار کئے گئے سی سی پی او لاہور ذوالفقار حمید اس پر توجہ دیں، 1041ڈکیتی کے مقدمات درج کئے گئے 678مقدمات زیر تفتیش 65فیصد مقدمات نامکمل ہیں، مقدمات کی ریکوری 12فیصد ہے جو بہت کم ہے سی سی پی او لاہور اورڈی آئی جی انویسٹی گیشن لاہور اس پر توجہ دیں تاکہ شہریوں کی زیادہ سے زیادہ ریکوری ہو سکے، گاڑی چوری و چھینے کے واقعات میں اضافہ ہو رہا ہے،

70فیصد مقدمات زیر تفتیش ہیں بڑے شہر میں گاڑی چوری و چھیننے کی و اردتیں زیادہ ہونا پریشان کن ہے، لاہور جیسے بڑے میٹروپولیٹن شہر میں چوری و چھینی گئی گاڑیوں کو تلاش کرنا مشکل ہے لاہور پولیس کی سینئر قیادت اس کو چیلنج سمجھ کر قبول کرنے اور مسروقہ گاڑیاں برا?مد کرے، زیادتی کے 261ملزمان میں سے 135ملزمان کو گرفتار کرنا کوئی بڑی بات نہیں 52فیصد ملزمان گرفتار ہو سکے ہیں زیادتی کے تمام ملزمان کو گرفتار کیا جائے افسران اس پر خصوصی توجہ دیں، لاہور پولیس PO,Sکو گرفتار کرنے میں ناکام رہی ہے گرفتاری کا تناسب ایک فیصد ہے ا?ئی جی پنجاب شعیب دستگیر نے PO,Sسخت ناپسندیدگی کا اظہار کرتے ہوئے سی سی پی او ذوالفقار حمید کو اس پر خصوصی توجہ دیتے ہوئے اشتہاریوں کی گرفتاریوں کا حکم دیا۔ ڈی آئی جی انویسٹی گیشن لاہور 12ڈکیتی کے ان ٹریس مقدمات پر خصوصی توجہ دیں اور ان کو ٹریس کرنے کے لئے تمام وسائل بروئے کار لائیں اور ان کی روپورٹ پیش کریں

مزید :

علاقائی -