شانگلہ،تمام پولیس سٹیشن اور دفاتر میں بل بورڈز لگانے کی ہدایت

شانگلہ،تمام پولیس سٹیشن اور دفاتر میں بل بورڈز لگانے کی ہدایت

  

پشاور(سٹاف رپورٹر)انسپکٹر جنرل آف پولیس خیبر پختونخوا اورریجنل پولیس آفیسر ملاکنڈ محمد اعجاز خان کی ہدایات کے تحت مطابق ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر شانگلہ ملک اعجاز نے ضلع بھر کے تمام پولیس جوانوں کو کورونا سے بچنے اور احتیاطی تدابیر اپنانے کی خاطر تمام تھانہ جات، چوکیات، چیک پوسٹوں اور دفاتر میں بل بورڈز لگا کر جن پر مکمل ہدایات درج ہے تاکہ پولیس جوانان ان ہدایات پرعمل پیرا ہو کر اپنے آپ کیساتھ ساتھ دوسروں کو بھی اس موذی مرض سے بچایا جا سکیں کیونکہ کورونا ایک جان لیوا بیماری ہے مگر مناسب احتیاط سے اس بیماری سے بچا جا سکتا ہے یاد رکھیں احتیاط علاج سے کئی گنا بہتر ہے اس بیماری کا ابھی تک کوئی علاج موجود نہیں ہے اسلئے احتیاط ہی بہترین علاج ہے احتیاط کرنے سے خود بھی محفوظ رہیں اور دوسروں کو بھی محفوظ رکھیں ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر ملک اعجاز نے تمام پولیس جوانوں کو مزیدہدایت کی ہے کہ کورونا وائرس سے پیدا ہونے والی بیماری میں خشک کھانسی، بخار،فلو،متلی ہونا یا قے آنا، بھوک نہ لگنا، سینے مین گھٹن اور سانس لینے میں مشکل پیش آنا شامل ہیں خاص طور پر کھانسی، سینے میں درد یا دباؤ اور سانس میں دشواری کی صورت میں فوراً ڈاکٹر سے رابطہ کریں ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر ملک اعجاز نے تمام جوانوں کو مزید ہدایت جاری کرتے ہوئے کہا کہ ماسک کا استعمال کن حالات میں ہونا چاہئے جب دفتر میں زیادہ لوگ بیٹھتے ہو، مجرم کی گرفتاری،عدالت میں پیشی، پولیس سٹیشن میں کام یا باہر دوران گشت ماسک ضرور استعمال کریں صابن سے ہاتھ کو کم از کم بیس سیکنڈ تک دھویا جائے بیماری کی صورت میں کسی سے نہ ملیں انہوں نے مزید ہدایت دیتے ہوئے کہا کہ کورونا کی وباء کے دوران اپنے کپ، پلیٹ وغیرہ استعمال کریں اور دوسروں کے کپ وغیرہ استعمال نہ کریں چھینکتے اور کھانستے وقت منہ پر ٹشو رکھیں یا بازوں میں چھینکیں تاکہ انفیکشن نہ پھیلیں ہاتھ ملانے، گلے لگانے سے پرہیز کرے خاص طور پر جب آپ کو زکام یا کھانسی ہو قرنطینہ والی جگہ یا علاقے میں جاتے وقت احتیاطی تدابیر۔ ایسے علاقے جو قرنطینہ کی وجہ سے آمدورفت کے لئے بند ہوں اور جہاں لوگوں کا باہر نکلنا بند ہو، وہاں جاتے وقت ماسک اور دستانے پہنیں ایک بوتل میں ڈیٹول ملا پانی ساتھ رکھیں لاؤڈ سپیکر کا استعمال کریں اور لوگوں کو گھروں میں رہنے کی تلقین کریں اور اپنی موبائل وین گشت کرتے ہوئے لوگوں کو گھروں میں رہنے کی تاکید کریں اگر کسی کو گرفتار کرنا ہوتو تمام احتیاطی تدابیر اختیار کریں تاکہ آپ خود بھی بیماری سے بچ سکیں یعنی ماسک اور دستانوں کا استعمال کریں جہاں تک ممکن ہوچھ فٹ کا فاصلہ رکھنا ضروری ہے اگر یہ فاصلہ رکھنا ممکن نہ ہو تو ماسک کا استعمال لازمی کریں یہ وائرس ہاتھ ملانے سے، چھینکنے اور کھانسنے سے،ان چیزوں کو ہاتھ لگانے سے جنہیں مریض نے ہاتھ لگایا ہو اور نئی تحقیق کے مطابق وہاں سے بھی منتقل ہو سکتا ہے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -