حکومت پلازمہ مافیا کی لوٹ مار کا نوٹس لے،ڈاکٹر مرتضیٰ مغل

  حکومت پلازمہ مافیا کی لوٹ مار کا نوٹس لے،ڈاکٹر مرتضیٰ مغل

  

کراچی(اسٹاف رپورٹر) پاکستان اکانومی واچ کے صدراورایف پی سی سی آئی مرکزی قائمہ کمیٹی برائے انشورنس کے کنوینر ڈاکٹر مرتضیٰ مغل نے کہا ہے کہ حکومت پلازمہ مافیا کی لوٹ مار کا نوٹس لے۔بہت سے نجی ہسپتال اورلیبارٹریاں اس دھندے میں ملوث ہیں جن کے خلاف کاروائی کی جائے۔ڈاکٹروں کی اکثریت انسانیت کی خدمت میں مصروف ہے وہیں انکی صفوں میں موجودکالی بھیڑیں لوٹ مار کر رہی ہیں۔ڈاکٹر مرتضیٰ مغل نے یہاں جاری ہونے والے ایک بیان میں کہا کہ کرونا وائرس کی وجہ سے ہیلتھ مافیا اورفارما مافیا پہلے ہی ناجائز کمائی کے لئے سرگرم تھیں اور اب پلازمہ مافیا کا ناجائز دھندہ بھی عروج پر پہنچ گیا ہے۔مافیا کے ایجنٹ بہت سے ہسپتالوں میں سرگرم ہیں جو کرونا وائرس سے صحت یاب ہونے والی مریضوں سے پلازمہ حاصل کر کے دیگر مریضوں کو انتہائی مہنگے داموں فروخت کر رہے ہیں۔دنیا بھر کی طرح پاکستان میں بھی پلازمہ تھراپی کے مثبت نتائج سامنے آئے ہیں مگر ابھی تک حتمی نتیجہ سامنے نہیں آیا ہے۔ صحت یاب ہونے والے مریض اگر اپنا پلازمہ عطیہ کریں تو نہ صرف مریضوں کو نئی زندگی ملے گی بلکہ شرح اموات بھی کم ہو جائے گی مگر بدقسمتی سے ایسا کم ہو رہا ہے اور زیادہ تر لوگ اس سے ناجائز فائدہ اٹھا رہے ہیں۔ اس شرمناک دھندے میں بہت سے کلینک بھی ملوث ہیں جو پشاس ہزار سے ایک لاکھ تک پلازمہ خرید کر پانچ سے دس لاکھ میں فروخت کر رہے ہیں جس کے لئے ہسپتالوں سے کوائف حاصل کر کے مریضوں اور انکے رشتہ داروں کو کالیں بھی کی جا رہی ہیں۔اس انسانیت دشمن مافیا نے اپنے منافع کے لئے غریبوں کے لئے علاج ناممکن بنا ڈالا ہے جس کا نوٹس لیا جائے۔یہ دھندا انسانیت اور شریعت دونوں کے منافی ہے کیونکہ خون کی خرید و فروخت ہر حال میں حرام ہے جبکہ کسی انسان کی جان بچانے کو قرآن نے تمام انسانوں کی جان بچانے کے برابر قرار دیا ہے۔اس موقع پر پاکستان اکانومی واچ کے چئیرمین برگیڈئیر(ر) محمد اسلم خان نے کہا کہ صحت پانے والے اللہ کا شکر ادا کریں اور پلازمہ عطیہ کرنے سے گریز نہ کریں جبکہ حکومت نجی شعبہ کی جانب سے خون اور پلازمہ کے عطیات جمع کرنے پر پابندی عائد کرنے پر غور کرے۔

مزید :

صفحہ آخر -