"فوج ایکشن کے لیے تیار ہے"، شمالی کوریا کھل کر سامنے آگیا

"فوج ایکشن کے لیے تیار ہے"، شمالی کوریا کھل کر سامنے آگیا

  

پیانگ یانگ، سیول(ڈیلی پاکستان آن لائن)شمالی کوریا اور جنوبی کوریا کے درمیان کشیدگی میں مسلسل اضافہ ہونے لگا۔ شمالی کوریا کا کہنا ہے کہ اس کی فوج ایکشن کے لیے تیار ہے جبکہ جنوبی کوریا کا کہنا ہے کہ وہ ہر قسم کی جارحیت کامقابلہ کرنے کی طاقت رکھتا ہے۔

تفصیلات کے مطابق شمالی کورین آرمی چیف نے کہا ہے کہ وہ 2018 میں بین الکوریائی مذاکرات کے دوران جن علاقوں کو غیر فوجی علاقے قرار دیا تھا اب دوبارہ ان علاقوں میں گھسنے کے لیے صورتحال کا جائزہ لے رہی ہے۔

شمالی کوریا کے سرکاری میڈیا کے مطابق آرمی چیف نے کہا کہ اگر جنوبی کوریا کے  شرپسند عناصر نے اپنی پراپیگنڈا مہم بند نہ کی توان کی فوج ایکشن کے لیے تیارہے۔انہوں نے کہا اس حوالے سے پیانگ یانگ حکومت کے احکامات کے عین مطابق اقدامات اٹھائے جائیں گے۔

خیال رہے دونوں ممالک کے دوران وہ پملفٹس تنازع کی وجہ بنے ہوئے ہیں جو جنوبی کوریاسے شمالی کوریا کی جانب غباروں کے ذریعے بھیجے جاتے ہیں۔ اطلاعات کے مطابق ان پمفلٹس پر شمالی کوریا میں انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کو بے نقاب کیا گیاہوتا ہے۔ جبکہ لوگوں کو شمالی کوریا سے فرار کے لیے بھی اکسایا جاتا ہے۔

دوسری جانب جنوبی کوریا کی وزارت دفاع  نے شمالی کوریا سے کہا ہے کہ وہ 2018کے معاہدے کی پاسداری کرے، تاہم انہوں نے یہ بھی کہا کہ ان کی فوج ہر قسم کی جارحیت کا جواب دینے کے لیے تیار ہے۔

مزید :

بین الاقوامی -