وزیراعظم عمران خان کا دورہ سندھ ، پروٹوکول کیلئے حیدرآباد اور سکھر سے کتنی گاڑیاں مانگ لی گئیں ؟ حیران کن خبر آ گئی

وزیراعظم عمران خان کا دورہ سندھ ، پروٹوکول کیلئے حیدرآباد اور سکھر سے کتنی ...
وزیراعظم عمران خان کا دورہ سندھ ، پروٹوکول کیلئے حیدرآباد اور سکھر سے کتنی گاڑیاں مانگ لی گئیں ؟ حیران کن خبر آ گئی

  

لاڑکانہ (ڈیلی پاکستان آن لائن )وزیرعظم عمران خان کا 16 اور 17 جون کو سندھ کے شہر جیکب آباد اور لاڑکانہ کے دورے کیلئے سندھ حکومت کی ہدایا ت پر لاڑکانہ کے کمشنر نے مجموعی طور پر دو شہروں کی انتظامیہ سے 22 گاڑیاں پروٹوکول کیلئے طلب کر لی ہیں تاہم وزیراعظم عمران خان کے فوکل پرسن ڈاکٹر ارسلان خالد نے وضاحت کی ہے کہ وزیراعظم آفس کی جانب سے کوئی ہدایات نہیں دی گئیں ہیں ۔

تفصیلات کے مطابق سوشل میڈیا پر ایک خط گردش کر رہاہے جو کہ لاڑکانہ کے کمشنر کی جانب سے حیدرآباد اور سکھر کے کمشنر کو لکھا گیاہے ، جس میں وزیراعظم عمران خان کے 16 اور 17 جون کو لاڑکانہ اور جیکب آباد کے دورے کے بارے میں آگاہ کیا گیاہے اور پروٹوکول کیلئے گاڑیاں طلب کی گئیں ہیں ۔

خط میں کمشنر لاڑکانہ کا کہناتھا کہ حکومت سندھ کے پروٹوکول ڈپارٹمنٹ کی جانب سے ہدایات موصول ہوئیں ہیں کہ متعلقہ ضلعوں میں پروٹوکول کیلئے گاڑیاں درکار ہیں اس لیے آپ سے گزار ش ہے کہ آپ مہربانی کر کے ” پراڈو ، فارچونر جیپ ، ٹویوٹا جی ایل آئی “ گاڑیاں ڈرائیورز کے ساتھ متعلقہ ڈویژن میں فراہم کریں ۔خط میں بتایا گیاہے کہ مجموعی طور پر حیدرآباد سے 16 اور سکھر سے 6 گاڑیاں طلب کی گئیں ہیں اور انہیں 15 جون تک ڈپٹی کمشنر لاڑکانہ کے حوالے کرنے کا کہا گیا تھا ۔

دوسری جانب یہ خط سامنے آنے پر وزیراعظم عمران خان کے فوکل پرسن برائے ڈیجیٹل میڈیا ڈاکٹر ارسلان خالد میدان میں آئے اور انہوں نے وضاحت دیتے ہوئے کہا کہ وزیراعظم آفس کی جانب سے ایسا کوئی بھی مطالبہ نہیں کیا گیاہے ۔ٹویٹر پر جاری پیغام میں ان کا کہناتھا کہ ”وزیراعظم عمران خان کے دفتر کی جانب سے سندھ حکومت کو ایسی کوئی سفارش نہیں کی گئی ہے ،ایسا لگتا ہے کہ پہلے اسے دانستہ طور پر خود ہی جاری کیا گیااور پھر وزیراعظم آفس کو بدنام کرنے کیلئے اسے لیک کیا گیا،وزیراعظم عمران خان کی ہدایت پر وزیراعظم آفس سختی کے ساتھ سادگی کے اقدامات پر عمل پیرا ہے ۔“

مزید :

اہم خبریں -قومی -