”اگر ٹی 20 ورلڈکپ ملتوی ہو سکتا ہے تو ایشیاءکپ کیوں نہیں؟ “ بھارت کا شرمناک چہرہ بے نقاب ہو گیا

”اگر ٹی 20 ورلڈکپ ملتوی ہو سکتا ہے تو ایشیاءکپ کیوں نہیں؟ “ بھارت کا شرمناک ...
”اگر ٹی 20 ورلڈکپ ملتوی ہو سکتا ہے تو ایشیاءکپ کیوں نہیں؟ “ بھارت کا شرمناک چہرہ بے نقاب ہو گیا

  

نئی دہلی (ڈیلی پاکستان آن لائن) ایشین کرکٹ کونسل (اے سی سی) ایشیاءکپ کی میزبانی سے متعلق تذکرے نے بھارت کو سیخ پا کر دیا ہے اور ایونٹ کو انڈین پریمیر لیگ (آئی پی ایل) کی راہ کا کانٹا قرار دیدیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق بھارتی بورڈ کا کہنا ہے کہ ایشیاءکپ کے حوالے سے کوئی بھی فیصلہ نہیں ہوا اور سری لنکا کو میزبانی منتقل کیلئے جانے میں کوئی صداقت نہیں، ہم نے پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) کے نہیں بلکہ اپنے مفادات کو دیکھنا ہے، اگر ٹی 20 ورلڈ کپ ملتوی ہوسکتا ہے تو اس کا ’وارم اپ ایونٹ‘ ایشیاءکپ کیوں نہیں ملتوی کیا جا سکتا۔

واضح رہے کہ رواں سال ایشیاءکپ کی میزبانی پاکستان نے کرنا تھی اور بھارت کیساتھ کشیدہ تعلقات کی بناءپر چند میچز متحدہ عرب امارات (یو اے ای) یا کسی اور نیوٹرل مقام پر کروانے کی تجویز بھی زیر غور تھی تاہم کورونا وائرس کی موذی وباءکے باعث اس کا انعقاد خطرے میں پڑگیا ہے۔

پی سی بی نے کرکٹ کے وسیع تر مفاد کو دیکھتے ہوئے اے سی سی کی میٹنگ کے دوران رواں سال ایشیاءکپ کی میزبانی سری لنکا کو دینے کی پیشکش کی کہ وہاں کورونا وائرس کی صورتحال انتہائی بہتر ہے اور ٹورنامنٹ کا بروقت انعقاد بھی ممکن ہے اور اس کے بدلے میں آئندہ ٹورنامنٹ کی میزبانی کرنے کا کہا جس پر اے سی سی کے علاوہ سری لنکا نے بھی مثبت جواب دیا تاہم پی سی بی اور دیگر ممبرز کی یہ کاوشیں بھارتی کرکٹ بورڈ کو ایک آنکھ نہیں بھا رہیں جو ایشیاءکپ ملتوی کروا کر آئی پی ایل کے انعقاد کے خواب دیکھنے میں مصروف ہے۔

مزید :

کھیل -