تندور مالکان نے وزیراعلیٰ پنجاب کے احکامات ہوا میں اڑا دئیے، روٹی اور نان کتنے روپے میں فروخت ہو رہے ہیں؟ پریشان کن خبر آ گئی

تندور مالکان نے وزیراعلیٰ پنجاب کے احکامات ہوا میں اڑا دئیے، روٹی اور نان ...
تندور مالکان نے وزیراعلیٰ پنجاب کے احکامات ہوا میں اڑا دئیے، روٹی اور نان کتنے روپے میں فروخت ہو رہے ہیں؟ پریشان کن خبر آ گئی

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) تندور مالکان نے وزیر اعلیٰ پنجاب کے احکامات پس پش ڈالتے ہوئے نان اور روٹی کی قیمت میں از خود اضافہ کر دیا ہے اور مختلف علاقوں میں روٹی 8 روپے جبکہ نان 15 روپے میں فروخت ہونے لگا ہے۔

تفصیلات کے مطابق جمعرات کو وزیر اعلیٰ پنجاب نے اپنے بیان میں سختی سے کہا تھا کہ کسی کو نان، روٹی کی قیمتیں نہیں بڑھانے دیں گے کیونکہ اس اضافے کا کوئی جواز نہیں، صوبائی کابینہ کمیٹی پرائس کنٹرول اضافہ کرنے پر کارروائی کرے، انتظامیہ بھی نان روٹی کی مقررہ نرخوں میں دستیابی یقینی بنائے لیکن لاہور میں بعض تندور مالکان نے روٹی کی قیمت 6 سے بڑھا کر 8 روپے کر دی ہے۔

نجی خبر رساں ادارے اے آر وائی نیوز کے مطابق خمیری روٹی کی قیمت 10 روپے سے بڑھا کر 12 سے15 روپے کر دی گئی، بعض تندوروں پر سادہ نان 15 روپے میں فروخت ہونے لگا ہے، تندور مالکان کا کہنا ہے کہ گندم کی قیمت میں اضافے کے باعث انہیں روٹی مہنگی کرنی پڑی ہے۔

وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار نے نان اور روٹی کے نرخوں میں استحکام کیلئے ہر ممکن اقدام کرنے کی ہدایت کرتے ہوئے کہا تھا کہ عوام کو مقررہ نرخوں پر نان، روٹی کی فراہمی ہر صورت یقینی بنائی جائے گی، اور زائد نرخ وصول کرنے پر کارروائی ہوگی۔

یاد رہے کہ رواں سال کے آغاز ہی سے کراچی سے لے کر خیبر پختون خوا تک آٹے کے بحران نے ملک کو جکڑ لیا ہے، اس بحران کے دوران غریب کو روٹی کے لالے پڑ گئے، کورونا وائرس کی وباءنے زور پکڑا تو یہ بحران مزید شدید ہو گیا اور آٹا مزید مہنگا کر دیا گیا، رواں سال جنوری میں سندھ اور کے پی میں آٹا ہی نایاب ہو گیا تھا۔

کراچی، حیدرآباد، لاہور اور راولپنڈی سمیت مختلف شہروں میں آٹے کی قیمت 70 روپے تک جا پہنچی تھی، آٹا بحران کے بعد نان بائی ایسوسی ایشن نے بھی قیمتوں میں اضافے کا عندیہ دیا، پشاور میں نان بائیوں نے ہڑتال کا اعلان کیا، ان کا مطالبہ تھا کہ روٹی کی قیمت 15 روپے کی جائے۔

مزید :

قومی -