دو لڑکیاں پب میں ایسا فحش لباس پہن کر آ گئیں کہ انتظامیہ نے انہیں فوری طور پرباہر نکال دیا

دو لڑکیاں پب میں ایسا فحش لباس پہن کر آ گئیں کہ انتظامیہ نے انہیں فوری طور ...
دو لڑکیاں پب میں ایسا فحش لباس پہن کر آ گئیں کہ انتظامیہ نے انہیں فوری طور پرباہر نکال دیا
سورس: TikTok

  

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) برطانیہ میں دو لڑکیاں ویدرسپون پب میں ایسا فحش لباس پہن کر آ گئیں کہ انتظامیہ نے انہیں فوری طور پر پب سے باہر نکال دیا۔ میل آن لائن کے مطابق اس ان لڑکیوں کے نام مولی ووڈ اور ایمی لی بتائے گئے ہیں جن کی عمر 20سال ہے۔ ان دونوں نے ’ہالٹر نیک ٹاپ‘ پہن رکھے تھے جو محض ان کے پوشیدہ اعضاء کو چھپا رہے تھے۔ ان کا باقی جسم ان سے نمایاں ہو رہا تھا۔

اس نیم برہنہ لباس پر پب کی انتظامیہ نے انہیں باہر نکال دیا اور جب انہوں نے پب کے ملازمین کے ساتھ تکرار کی تو انہوں نے کہا کہ ”تمہارا لباس کسی مرد کے بغیر شرٹ ہونے کے برابر ہے، چنانچہ جب ہم مردوں کو بغیر شرٹ آنے کی اجازت نہیں دیتے تو تم دونوں بھی اس لباس کے ساتھ نہیں آ سکتیں۔“برطانوی شہر ریڈنگ کی رہائشی دونوں سہیلیوں کا کہنا تھا کہ ان کے ساتھ لباس کی وجہ سے امتیازی سلوک کیا گیا۔ پب کے لوگوں نے ہمارے ساتھ انتہائی شرمناک سلوک کا مظاہرہ کیا۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -برطانیہ -