وہ یورپی ملک جہاں کورونا کی بھارتی قسم سر اٹھانے لگی

وہ یورپی ملک جہاں کورونا کی بھارتی قسم سر اٹھانے لگی
وہ یورپی ملک جہاں کورونا کی بھارتی قسم سر اٹھانے لگی
سورس: Wikimedia Commons

  

بارسلونا (ارشد نذیر ساحل ) یورپی ملک سپین کے شہر بارسلونا میں کورونا وائرس کی بھارتی قسم کے کیسز سر اٹھانے لگ گئے ہیں۔ کورونا کی بھارتی قسم برطانوی وائرس سے زیادہ شدید ہے۔ بارسلونا میں ہندوستانی قسم کے وائرس کا تناسب جون کے آغازپر 12 فیصد تھا جو گزشتہ ہفتے کہ نسبت دو گنا زائد ہے۔وائرس کی بھارتی قسم برطانوی وائرس سے 64 فیصد زیادہ خطرناک ہے۔ وائرس کے باعث سپین میں ویکسین کے عمل کو تیز کر دیا گیا ہے۔

وائرس کی بھارتی قسم کے کیسز ہسپانوی دارالحکومت میڈرڈ اور ویلنسیا میں سامنے آئے تھے۔ گزشتہ دنوں میڈرڈ کے محکمہ صحت نے 22 کیسز کی اطلاع دی جن میں سے 18 کیسز تصدیق شدہ تھے۔ حکام کے مطابق آنے والے ہفتوں میں کیسز میں اضافہ ہو سکتا ہے۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق رواں ہفتے بھارتی قسم کے کیسز میں اضافے کا امکان ہے۔

سپین میں گزشتہ سال دسمبر کےمہینے میں کورونا ویکسین لگانے کا آغاز کیا گیاتھا۔ ملک بھر میں 40 سے 99 سال تک کی عمر کے 31.6 فیصد افراد کو کورونا ویکسین کی پہلی ڈوز لگا دی گئی ہے۔ رواں ہفتے کے آخر تک 15 ملین افراد کو ویکسین لگانے کا ہدف مقرر کیا گیا ہے۔

مئی کے پہلے ہفتے تک 50 لاکھ افراد، جون کے پہلے ہفتے تک 10 ملین افراد کو ویکسین لگانے کا ہدف مکمل کیا جا چکا ہے۔ 

مزید :

بین الاقوامی -کورونا وائرس -