اعلیٰ عدالتوں کے ججز پر دباؤ یا ہدایات بارے خبریں ، وزارت قانون وانصاف نے حقیقت بتا دی 

 اعلیٰ عدالتوں کے ججز پر دباؤ یا ہدایات بارے خبریں ، وزارت قانون وانصاف نے ...
 اعلیٰ عدالتوں کے ججز پر دباؤ یا ہدایات بارے خبریں ، وزارت قانون وانصاف نے حقیقت بتا دی 

  

 اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن) اعلی عدالتوں کے ججز کے خلاف قراردادیں پاس کروانے کے حوالے سے دباﺅ یا ہدایات جاری کرنے کے حوالے سے خبریں مکمل طورپر بے بنیاد اور من گھڑت ہیں۔

 وزارت قانون وانصاف کے ترجمان کی طرف سے جاری ایک بیان میں واضح کیا گیا ہے کہ حکومت پاکستان اور وزارت قانون کی جانب سے ملک بھر کی بارایسوسی ایشنز کو اعلی عدالتوں کے ججز کے خلاف قراردادیں پاس کرنے کے حوالے سے کوئی دباؤ ڈالا گیا ہے اور نہ ہی انہیں کوئی ایسی ہدایات جاری کی گئی ہیں۔

ترجمان کا کہنا تھا کہ ان خبروں میں کوئی صداقت نہیں جن میں کہا گیا ہے کہ وفاقی حکومت تحصیل بارز ، ڈسٹرکٹ بارز اور ہائیکورٹ بار ایسوسی ایشنوں پر سپریم کورٹ اور اعلی عدلیہ کے ججوں کے خلاف قراردادیں جاری کرنے کے لئے دباؤ ڈال رہی ہے، ایسی خبریں مکمل طورپر من گھڑت، مضحکہ خیز اور جھوٹ پر مبنی ہیں۔ ترجمان نے واضح کیا کہ وفاقی حکومت اور نہ ہی وزارت قانون نے ایسی کوئی ہدایات جاری کی ہیں اور نہ ہی کسی بارز پر اس قسم کا دباؤ ڈالا جا رہا ہے۔

مزید :

قومی -