سانحہ بادامی باغ.... عدالتی تحقیقات جلد شروع کریں!

سانحہ بادامی باغ.... عدالتی تحقیقات جلد شروع کریں!

  



جوزف کالونی بادامی باغ کی آتشزدگی کئی پولیس افسروں کو کھا گئی ہے۔ اب حال ہی میں تعینات ہونے والے لاہور کے سی سی پی او امجد جاوید سلیمی کو تبدیل کر دیا گیا اُن کی جگہ سرگودھا کے ریجنل پولیس آفیسر محمد ایملیش کو لاہور کا سی سی پی او بنا دیا گیا ہے۔ یہ تبدیلیاں عدالت عظمیٰ کی ہدایت کی روشنی میں کی گئیں، جس نے واقعہ کا از خود نوٹس لیا اور پنجاب پولیس کی رپورٹ مسترد کر دی تھی۔ عدالت کی نظر میں اعلیٰ پولیس حکام حالات سنبھالنے میں نکام رہے۔

دوسری طرف پولیس تاحال حقائق منظر عام پر لانے اور نامزد ملزموں کو گرفتار کرنے میں ناکام رہی ہے ، بلکہ مصری شاہ لوہا مارکیٹ کے تاجروں کی طرف سے احتجاج کا بھی سامنا ہے جن کے مطابق ایف آئی آر میں غلط طور پر بعض تاجر نامزد کئے گئے، بعض کو گرفتار کیا گیا اور باقی لوگوں کو ہراساں کیا جا رہا ہے اور وہ کاروبار بند کرنے پر مجبور ہیں۔

بادامی باغ کا یہ حادثہ اپنے اندر کئی پہلو رکھتا ہے۔ کہا جاتا ہے کہ یہ کچی آبادی ہے اور یہاں لوگ1951ءسے پہلے سے رہتے چلے آ رہے ہیں اور اُن کو مالکانہ حقوق بھی دیئے جا چکے تھے۔ اِسی حوالے سے یہ الزام بھی ہے کہ بعض تاجر اِس بستی کی مارکیٹ سے ملحقہ زمین خرید نا چاہتے تھے۔ یہ بھی کہا جا رہا ہے کہ خود بستی والوں نے8کنال زمین پر ناجائز قبضہ کر کے چرچ بنا رکھا ہے۔

بستی کی آتشزدگی افسوسناک ہے اس پر حکومتیں بھی حرکت میں آئیں۔ جلنے والے مکان تعمیر کے آخری مراحل میں آ گئے، مکینوں کو شامیانے مہیا کر کے خوراک بھی دی جا رہی ہے اور امدادی رقوم بھی دی جا چکی ہیں جو 10لاکھ روپے تک ہیں۔ بعض غیر سرکاری تنظیمیں بھی متحرک اور امداد کر رہی ہیں۔

یہ سب آتشزدگی اور شرپسندی کی وجہ سے ہوا، جن لوگوں نے زیادتی کی اُن کو سزا سے نہیں بچنا چاہئے، لیکن یہ بھی ضروری ہے کہ اس سانحہ کی تحقیقات قطعی غیر جانبدارانہ اور کسی بھی نوعیت کے دباﺅ یا اثرو رسوخ سے بالاتر ہونی چاہئے، کسی بے گناہ کو ملوث نہ کیا جائے تو کسی قصور وار کو چھوڑا بھی نہ جائے۔ اِس کے لئے بہت احتیاط کی ضرورت ہے۔

اِس سانحہ کی عدالتی تحقیقات کے لئے خط لکھا جا چکا، چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ کو جلد کسی فاضل جج کو نامزد کرنا چاہئے اور تحقیقات بھی جلد شروع کر کے پایہ تکمیل تک پہنچائی جائے تاکہ اصل حقائق سامنے آئیں۔

مزید : اداریہ


loading...