سی پیک منصوبے سے بھر پور فائدہ اٹھانے کیلئے حکمت عملی وضع کرنا ہوگی :ماہرین

سی پیک منصوبے سے بھر پور فائدہ اٹھانے کیلئے حکمت عملی وضع کرنا ہوگی :ماہرین

 لاہور (کامرس رپورٹر) لاہور چیمبر میں چین پاکستان اکنامک کاریڈور کے چیلنجز اور مواقع کے موضوع پر منعقدہ سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے ماہرین نے کہا ہے کہ اس منصوبے سے پوری طرح فائدہ اٹھانے کے لیے تمام پہلوؤں کو دیکھنا، مواقع سے فائدہ اور چیلنجز سے نمٹنے کے لیے حکمت عملی وضع کرنا ہوگی۔ سیمینار سے خطاب کرنے والو ں میں گیلپ سروے پاکستان کے چیف ایگزیکٹو آفیسر ڈاکٹر اعجاز شفیع گیلانی ، لاہور چیمبر کے صدر عبدالباسط، سینئر نائب صدر امجد علی جاوا، نائب صدر محمد ناصر حمید خان، ملک طاہر جاوید، مجیب الرحمن شامی، حفیظ اللہ خان نیازی، حبیب اکرم، سید محمود غزنوی، راجہ عدیل اشفاق، مقصود بٹ، میاں محمد نواز، محمد انور شامل تھے۔ ڈاکٹر اعجاز شفیع گیلانی ن ے کہا کہ چین پاکستان اکنامک کاریڈور ہر حوالے سے سب کے لیے مفید ہونا چاہیے، اس کے لیے تمام پہلوؤں کو زیر غور لانا ضروری ہے۔ انہوں نے کہا کہ کچھ حلقے اس منصوبے کے متعلق کچھ تحفظات رکھتے ہیں جن میں سے ایک یہ بھی ہے کہ مغربی دنیا سے ہمارے تعلقات سرد مہری کا شکار ہوجائیں گے لہذا پالیسی سازوں کو اس پر توجہ دینا ہوگی۔ انہوں نے کہا کہ 2008ء میں چین سے تجارت پاکستان کی کل تجارت کا گیارہ فیصد تھی جو 2015ء میں 29فیصد ہوگئی ہے ، پاکستان کو ساری دنیا سے تجارت پر توجہ دینا ہوگی۔ لاہور چیمبر کے صدر عبدالباسط نے کہا کہ چین پاکستان اکنامک ڈور حقیقی معنوں میں گیم چینجر ثابت ہورہا ہے کیونکہ اس نے ساری دنیا کی توجہ اپنی جانب مبذول کی ہے۔ اس منصوبے سے پاکستان کے انفراسٹرکچر، توانائی اور انسانی وسائل کے شعبوں میں انقلاب آئے گی۔ لاہور چیمبر کے سینئر نائب صدر امجد علی جاوا اور نائب صدر ناصر حمید خان نے کہا کہ چین پاکستان اکنامک کاریڈور کے منصوبوں کے سلسلے میں مقامی مینوفیکچررز کو ترجیح دی جائے تاکہ وہ بھی اس منصوبے سے مستفید ہوسکیں۔

مزید : کامرس


loading...