اسرائیلی فورسز نے فلسطینی نقشہ دفتر بند کردیا ،سربراہ گرفتار

اسرائیلی فورسز نے فلسطینی نقشہ دفتر بند کردیا ،سربراہ گرفتار

مقبوضہ بیت المقدس (اے پی پی) سرائیلی پولیس نے مقبوضہ بیت المقدس میں فلسطینیوں کے ایک تحقیقاتی مرکز کو 6 ماہ کے لیے بند کردیا ہے اور اس کے ڈائریکٹر کو گرفتار کر لیا ہے۔اسرائیلی پولیس نے ان پر فلسطینی سکیورٹی سروسز کے لیے کام کرنے کا الزام عائد کیا ہے۔اسرائیلی پولیس نے ایک بیان میں مقبوضہ بیت المقدس میں نقشہ نویس کے دفتر کو چھے ماہ کے لیے بند کرنے کی تصدیق کی ہے۔اسرائیلی حکام نے دفتر کے سربراہ خلیل طفاکجی پر الزام عاید کیا ہے کہ وہ فلسطینی اتھارٹی کے لیے کام کررہے تھے اور مقبوضہ بیت المقدس میں فلسطینیوں کی جانب سے اسرائیلی یہودیوں کو اراضی کی فروخت کی نگرانی کررہے تھے۔اسرائیل کی داخلی سلامتی کے وزیر گیلاد ایردان نے کہا ہے کہ ’’طفاکجی کا کام فلسطینی اتھارٹی میں ہماری خود مختاری کو نقصان پہنچانے کے منصوبے کا حصہ تھا اور وہ شہر میں یہود کو اپنی اراضی فروخت کرنے والے فلسطینیوں کو دہشت زدہ کررہے تھے۔

اس انتہا پسند اسرائیلی وزیر نے کہا ہے کہ ’’ میں مقبوضہ بیت المقدس میں فلسطینی خود مختاری کو روکنے کے لیے پوری طاقت سے کارروائیوں کا سلسلہ جاری رکھوں گا۔

مزید : عالمی منظر


loading...