یو ای ٹی ،بین الاقوامی کانفرنس برائے مینجمنٹ، بزنس اور ٹیکنالوجی اختتام پذیر

یو ای ٹی ،بین الاقوامی کانفرنس برائے مینجمنٹ، بزنس اور ٹیکنالوجی اختتام پذیر

لاہور(ایجوکیشن رپورٹر) یونیورسٹی آف انجینئرنگ اینڈ ٹیکنالوجی لاہورمیں انسٹیٹوٹ آف بزنس اینڈ مینجمنٹ کے زیر اہتمام تین روزہ بین الاقوامی کانفرنس برائے مینجمنٹ، بزنس اور ٹیکنالوجی2017ء اختتام پذیر ہوگئی۔ افتتاحی تقریب میں وائس چانسلر پنجاب یونیورسٹی پروفیسر ڈاکٹر ظفر معین ناصر وائس چانسلر یو ای ٹی لاہور پروفیسر ڈاکٹر فضل احمد خالد، ڈائریکٹر آئی بی ایم پروفیسر ڈاکٹر محمد شاہد رفیق نے شرکت کی۔ وائس چانسلر پنجاب یونیورسٹی پروفیسر ڈاکٹر ظفر معین ناصرنے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ معاشی ترقی کے اہداف کو حاصل کرنے کیلئے نوجوان نسل کا جدید ٹیکنالوجی سے لیس ہونا ناگزیر ہے اوراس سلسلے میں جامعات کو آپس میں مشترکہ کوششوں سے تدریسی و تحقیقی میدان میں ایجادات سے حصہ لینا ہوگا۔

تاکہ معاشرے کیلیے اپنا کلیدی کردار ادا کیا جا سکے۔ انہوں نے کہا کہ تمام تحقیق کو مارکیٹ میں لانے کی اشد ضرورت ہے تاکہ مؤثر حکمت عملی سے مارکیٹ کی طلب کو بھی پورا کیا جا سکے انہوں نے کہا کہ یو ای ٹی شاندار تاریخ کی مالک درس گاہ ہے لہذا اس سے نوجوان نسل کو مستفید ہو کر انجنیئرنگ، بزنس اور دیگر شعبوں میں اپنے سینئرزکے نقش قدم پر چلنا چاہئے تاکہ مسابقت کے دور میں پر اعتماد انداز سے مثبت امور سر انجام دے سکیں۔ وائس چانسلر یو ای ٹی لاہور پروفیسر ڈاکٹر فضل احمد خالد نے کہا جدید تکنیکی مہارتوں کے سیکھنے سے ہی ملک ترقی یافتہ اقوام کی فہرست میں آسکتا ہے اس کیلئے سب کو اپنی اپنی ذمہ داری نبھانا ہوگی۔ انہوں نے کہا کہ ٹیلنٹ، ٹیکنالوجی اور برداشت ایک دوسرے کے تجربات سیکھنے کیلیے لازمی اجزاء ہیں اس سے مختلف اداروں میں قربتیں بھی بڑھیں گی۔ اس کے علاوہ نصاب میں تبدیلی اور مارکیٹ کے مطابق تجربات سے نہ صرف معیاری افرادی قوت تیار ہو سکے گی بلکہ جامعات اپنے روایتی کردار سے آگے بڑھ کے ملک کی خدمت کر سکیں گی۔ انہوں نے امید ظاہر کی کہ کانفرنس سے حاصل ہونے والی تجاویز اور خیالات مستقبل کیلئے بہترین کاروباری منصوبوں کے طور پر کارگر ثابت ہو سکیں گے۔ اس موقع پر ڈائریکٹر آئی بی ایم پروفیسر ڈاکٹر محمد شاہد رفیق اور ڈاکٹر فیاض نے حاضرین کو کانفرنس ،محققین اور جامعات کی شرکت اور حاصل شدہ تجاویز سے آگاہ کیا۔ آخر میں مہمانوں ، شرکاء اور منتظمین میں شیلڈ یں اور اسناد تقسیم کی گئیں۔

مزید : میٹروپولیٹن 4


loading...