کوئٹہ،سیکرٹری ہائر ایجوکیشن بلوچستان اورمردم شماری میں حصہ لینے والے 3 اساتذہ اغوا

کوئٹہ،سیکرٹری ہائر ایجوکیشن بلوچستان اورمردم شماری میں حصہ لینے والے 3 ...

کوئٹہ (اے این این،این این آئی) سیکریٹری ہائر ایجوکیشن بلوچستان عبداللہ جان کو نامعلوم افراد نے کوئٹہ سے اغوا کرلیا ۔پولیس کے مطابق سیکرٹری ہائر ایجوکیشن بلوچستان کو کوئٹہ کے علاقے وحدت کالونی سے اغوا کیا گیا، اغوا کی اطلاع ان کے بھائی نے دی ہے ۔پولیس کا کہنا ہے کہ عبداللہ جان گھر سے سول سیکرٹریٹ اپنے دفتر آرہے تھے کہ راستے سے اغوا کرلئے گئے ،ان کی بازیابی کیلئے کوششیں شروع کردی گئی ہیں۔وزیراعلی بلوچستان نواب ثنا اللہ زہری نے سیکرٹری ہائر ایجوکیش کے اغوا پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے آئی جی بلوچستان سے رپورٹ طلب کرتے ہوئے ان کی باحفاظت بازیابی کے فوری اقدامات کرنے کی ہدایت کی ہے۔ دوسری جانب سیکرٹری ہائر ایجوکیش کے اغوا کے واقعہ کے بعد کوئٹہ بھر میں سیکیورٹی ہائی الرٹ کر دی گئی ہے اور جگہ جگہ پولیس، ایف سی، سی ٹی ڈی، سی آئی اے اور لیویز نے ناکہ بندی کر دی ہے۔ دریں اثناء بلوچستان سول سیکرٹر یٹ کے رہنماؤں صالح محمد ناصر، امیر حمزہ محمد شہی اور دیگر رہنماؤں نے سیکر ٹری ہا ئر ایجوکیشن عبداللہ جان کے اغواء پر شد ید احتجا ج اور رد عمل دیتے ہوئے کہا کہ حکومت سیکر ٹری لیول کے افسران تک کے تحفظ میں نا کا م ہوچکی ہے ،حکومت اور سکیورٹی ادارے تمام وسا ئل بروئے کار لا تے ہوئے سیکر ٹری ہا ئر ایجوکیشن عبدا للہ جان کو فوری طور پر با زیاب کروائیں، آج بازیاب نہ ہونے کی صورت میں سیکر ٹریٹ کے تمام ملازمین احتجا جاً وفتری امور کا مکمل کا بائیکا ٹ کریں گے۔صوبہ بلوچستان کے ضلع آواران سے مردم شماری میں حصہ لینے والے تین سرکاری ملازمین کو علاقہ گیشگور سے اغواء کر لیا گیا ۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق اغوا ہونیوالے تینوں اساتذہ ہیں جو مردم شماری سے متعلق تربیت حاصل کرنے کے بعد گھروں کو جا رہے تھے۔ سرکاری حکام کے مطابق آواران صوبہ کے ان 15 اضلاع میں شامل ہے جہاں پہلے مرحلے میں مردم شماری کا عمل مکمل کیا جائے گا۔واضح رہے کہ بلوچ عسکریت پسند تنظیم کالعدم بلوچستان لبریشن فرنٹ نے مردم شماری عمل کو سبوتاژ کرنیکی بھی دھمکی دے رکھی ہے ، جبکہ کمشنر شماریات کا ایک روز قبل کہنا تھا مردم شماری سے متعلق سکیورٹی کا کوئی بڑا مسئلہ درپیش نہیں، عملے کو تحفظ فراہم کرنے کیلئے سکیورٹی کے ہر ممکن اقدامات کیے گئے ہیں۔

مزید : صفحہ اول


loading...