گوا،ہولی کے روز غیر ملکی خاتون سیاح بداخلاقی کے بعدقتل

گوا،ہولی کے روز غیر ملکی خاتون سیاح بداخلاقی کے بعدقتل

گوا (مانیٹرنگ ڈیسک)ہولی کا تہوار عموما رنگوں کا تہوار کہلاتا ہے مگر بھارتی ریاست گوا کے ایک ساحل پر ہولی کے تہوار کے دوران غیر ملکی خاتون سیاح کو جنسی درندگی کا نشانے کے بعدقتل کرکے جسم کے نازک حصوں کو کاٹ دیا اور چہرے کو بری طرح مسخ کردیا۔ خاتون ہندوؤں کی مذہبی رسومات میں شرکت کیلئے گوا میں آئی تھی۔خاتون انسانوں کی بقاء اور پریشانیوں کو دور کرنے کیلئے تحقیقاتی کام کر رہی تھی۔ٹائمز آف انڈیا کے مطابق ڈینل میکلوہین نامی آئرش خاتون سیاح ہولی کے موقع پر ہندوؤں کی مذہبی رسوما ت میں شرکت کیلئے آئی تھی اور گوا کے ایک مقامی ہوٹل میں مقیم تھی۔ ہولی کی شام وہ اپنے دوستو ں کے ہمراہ ساحل پر گئی تھی۔ بعد ازاں ہولی سے اگلے دن اس کی لاش برہنہ حالت میں قریبی کھیتوں میں ایک کسان کو ملی۔مقامی پولیس کے مطابق درندہ صفت اور سفاک قاتلوں نے جسم کے نازک حصوں کو کاٹ دیا اور چہرے کو بری طرح کچل دیا تھا تاکہ اس کو پہچانا نہ جا سکے۔ واقعے کے بعد سے اس کے دوست بھی لاپتا ہیں۔پولیس فیس بک اور سی سی ٹی وی فوٹیج کی مدد سے واقعے کی تحقیقات کر رہی ہے۔

مزید : علاقائی


loading...