محفوظ انتقال خون پراجیکٹ ،ملتان اور بہاولپور میں ریجنل بلڈ سنٹر ز کاافتتاح کر دیا گیا

محفوظ انتقال خون پراجیکٹ ،ملتان اور بہاولپور میں ریجنل بلڈ سنٹر ز کاافتتاح ...

ملتان،خان پور بگاشیر(وقائع نگار ،نمائندہ پاکستان)صوبائی وزیر صحت پنجاب خواجہ سلمان رفیق نے کہا ہے کہ صوبائی حکومت عوام کو صحت کی بہترین سہولیات فراہم کرنے کیلئے کوشاں ہے۔ اس لئے علاج و معالجہ کے بڑے ہسپتالوں کے قیام کے ساتھ ساتھ ادویات کی کوالٹی اور انتقال خون کے عمل کو محفوظ بنانے کیلئے انہیں جدید خطوط پر استوار کیا جا رہا ہے۔ پنجاب حکومت کے محفوظ انتقال خون پراجیکٹ کے فیز 1 میں ملتان اور بہالپور میں ریجنل بلڈ سنٹر قائم کیے گئے ہیں۔ ان سنٹر کے ساتھ جنوبی پنجاب کے 11 ہسپتال منسلک کئے گئے ہیں۔ ان تمام ہسپتالوں کو یہ سنٹر مفت محفوظ خون مہیا کریں گے۔ پاکستان میں اس نوعیت کے صرف 10 سنٹر قائم ہیں جس میں 2 جنوبی پنجاب میں قائم ہیں۔سیکنڈ فیز میں سنٹر پنجاب میں بلڈ سنٹر قائم کئے جائیں گے اور جناح ہسپتال اور میو ہسپتال لاہور کے بلڈ بنک کو اپ گریڈ کیا جائے گا۔ اس سلسلے میں فیصل آباد میں بھی ریجنل بلڈ سنٹر قائم کیا جائے گا۔ یہ بات وزیر صحت پنجاب خواجہ سلمان رفیق نے جرمنی حکومت کے تعاون سے مجموعی طور پر 30 کروڑ روپے کی لاگت سے ملتان اور بہالپور کے ریجنل بلڈ سنٹرز کی افتتاحی تقریب سے خطاب میں بتائی۔ اس موقع پر جرمنی کی سفیراینا لیپل، ڈپٹی کمشنر ملتان نادر چٹھہ، پروفیسر ڈاکٹر حسن عباس ظہیر، ڈاکٹر ظفر اقبال، ڈاکٹر معصومہ زیدی، ڈاکٹر محمد یونس، ڈاکٹر کامران سالک، ڈاکٹر ملک عاشق، چیئرمین ضلع کونسل دیوان عباس بخاری،میئر ملتان نوید الحق ارائیں اور ڈپٹی میئر منور احسان قریشی بھی موجود تھے۔صوبائی وزیر صحت نے کہا کہ یہ دونوں سنٹرز جنوبی پنجاب کے ضلع ملتان، مظفر گڑھ خانیوال، لودہراں اور بہاولپور کے چالیس لاکھ لوگوں کو محفوظ اور فوری خون مہیا کریں گے۔ انہوں نے بتایا کہ ریجنل بلڈ سنٹر ملتان میں سالانہ 50 ہزار خون کے بیگ رکھنے کی گنجائش موجود ہے۔ جبکہ دونوں سنٹروں کو جدید آلات اور تربیت یافتہ سٹاف مہیا کیا گیا ہے۔ جرمن سفیر اینا لیپل نے پنجاب حکومت کی عوام تک سہولیات کی سہل فراہمی کی کاوشوں کو سراہتے ہوئے ریجنل بلڈ سنٹر ملتان اور بہالپور کو ’’سکسیس سٹوری‘‘ (Success Story) قرار دیا۔ انہوں نے کہا کہ پنجاب حکومت جنوبی پنجاب کے مسائل حل کرنے میں پیش پیش ہے اور اس خطہ کو ترقی یافتہ بنانا چاہتی ہے جنوبی پنجاب میں ان بلڈ سنٹرز کا قیام خوش آئند اور عوام کے لیے ایک تحفہ ہے۔ انہوں نے کہا کہ جرمن حکومت پاکستان کی ترقی میں ہر طرح کی معاونت کرے گی۔تقریب کے آخر میں ریجنل بلڈ سنٹر ایڈمنسٹریشن کی جانب سے وزیر صحت پنجاب خواجہ سلمان رفیق ، ’’جرمن سفیر اینا لیپل کو سوینئر پیش کیا گیا جب کہ مختلف شعبہ ہائے زندگی سے تعلق رکھنے والے افراد میں شیلڈزبھی تقسیم کی گئیں۔ دریں اثناء وزیرسپشلائزڈ ہیلتھ کیئر اینڈ میڈیکل ایجوکیشن پنجاب خواجہ سلمان رفیق نے کہا ہے کہ ہسپتالوں کی مینجمنٹ آؤٹ سورس کررہیے ہیں تاہم ہسپتالوں کے اثاثے حکومت کے پاس ہی رہیں گے۔کڈنئی سنٹر ملتان کی مینجمنٹ کو بھئی آؤٹ سورس کرکے انڈس گروپ کے حوالے کیا جارہا ہے۔ملتان میں صحافیوں سے گفتگو کرنے کے حوالے کیا جارہا ہے۔ملتان میں صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ حکومت پنجاب کڈنی سنٹر کی مالی معاونت جاری رکھے گی۔ہسپتالوں کی مینجمنٹ آؤٹ سورس کرنے سے علاج معالجے کی سہولیات میں بہتری آئے گی۔مظفرگڑھ میں طیب اردگان ہسپتال اس کی بہترین مثال ہے۔کڈنی سنٹر کی مینجمنٹ آؤٹ سورس کے انڈس گروپ کے حوالے کرنے کے معاہدہ آئندہ چند روز میں حتمی شکل طے پا جائے گا۔ علاوہ ازیں صوبائی وزیر صحت سلمان رفیق نے کہاکہ حکومت پنجاب وزیر اعلی پنجاب محمد شہباز شریف کی قیادت میں شعبہ صحت عامہ پر ترجیح بنیادوں پر کام کررہی ہے عوام کو صحت عامہ کی جدید سہولیات مفت فراہم کرنا حکومت کی ترجیحات میں شامل ہے‘یہ بات انہوں نے طیب اردگان ہسپتال مظفرگڑھ میں توسیع کے کام کا معائنہ کرتے ہوئے کہی ‘ڈپٹی کمشنر مظفرگڑھ سیف انورجپہ بھی ان کے ہمراہ تھے‘صوبائی وزیر نے کہاکہ طیب اردگان کی توسیع سے نہ صرف علاقے کی عوام کو صحت عامہ کی جدید سہولیات میسر آئیں گی بلکہ گردونواح کے علاقے بالخصوص دور دراز کے دیہی علاقوں کی عوام کو صحت عامہ کی تمام جدید سہولیات مفت دستیاب ہونگی‘صوبائی وزیر نے بتایا کہ جلد ہی دوست ملک ترکی سے ڈاکٹروں کا وفد ہسپتال آرہا ہے جواپنی پیشہ ورانہ خدمات سرانجام دے گا‘انہوں نے ہدایات کی کہ ہسپتال کی توسیع کے منصوبے پر تیزی سے کام کیا جائے اور استعمال ہونے والے مٹیریل کے معیار کا خاص خیال رکھا جائے ‘معیار پرکسی قسم کا سمجھوتا نہیں کیا جائے گا‘صوبائی وزیر نے ہسپتال کے مختلف شعبہ جات کا بھی معائنہ کیا۔اس موقع پر انہوں نے مریضو ں سے ہسپتال کی سروسز کے بار ے میں دریافت کیا ۔

مزید : کراچی صفحہ اول


loading...