ایف ایف سی اور حب کو کے درمیان پاورپلانٹ لگانے کا معاہدہ

ایف ایف سی اور حب کو کے درمیان پاورپلانٹ لگانے کا معاہدہ

کراچی( پ ر) پاکستان کے سب سے بڑے فرٹیلائزر پروڈیوسر فوجی فرٹیلازئز کمپنی اور حب پاور کمپنی لمیٹڈ (حبکو) کے درمیان تھر میں کوئلے سے 300 میگا واٹ بجلی پیدا کرنے والے پاور پلانٹ کی تنصیب کے سٹریٹجک اشتراک ہو گیا ہے۔ اس بات کا اعلان پندرہ مارچ 2017 کو راولپنڈی میں ہونے والی ایف ایف سی بورڈ آف ڈائریکٹرز کی میٹنگ میں کیا گیا۔ سی پیک منصوبے کے تحت بننے والے اس پاور پلانٹ کو ایک خصوصی مقصد کے تحت قائم کی جانے والی کمپنی ، تھر انرجی لمیٹڈ تعمیر کرے گی ۔ اس پلانٹ کے لیے کوئلہ تھر بلاک2 کی فیلڈز سے حاصل کیا جائیگا۔ حب کو کے ساتھ ہونے والے اس اشتراک کے حوالے سے بات کرتے ہوئے ایف ایف سی کے چیف ایگزیکٹو اور ایم ڈی، لیفٹیننٹ جنرل (ریٹائرڈ) شفقات احمد (ہلال امتیاز ملٹری) کا کہنا تھا کہ مقامی کوئلے کے استعمال سے یہ منصوبہ ملک میں بجلی کو پوارا کرنے میں اہم سنگ میل ثابت ہوگا جو موجودہ حکومت کا ایک اہم مقصد بھی ہے۔ دوسری جانب یہ کمپنی کی جانب سے ایک طویل مدتی انویسٹمنٹ ہے جس سے ہمارے اسٹیک ہولڈرز کو بھی فائدہ ہوگا۔ ایف ایف سی اور حبکو، دونوں کاروباری اداروں کو نیشنل اور انٹر نیشنل سظح پر پزیرائی حاصل ہے۔ لیفٹیننٹ جنرل (ریٹائرڈ) شفقات احمد کا مزید کہنا تھا کہ اس اشتراک سے کاروباری ترقی کی نئی راہیں کھلیں گی۔ دونوں اداروں کی مظبوط کارکردگی اسٹیک ہولڈرز کے اعتماد میں اضافے کا سبب بنے گی۔ منصوبے پر کام شروہ ہو چکا ہے جبکہ 2019 کے اختتام تک کمرشل پروڈکشن کا آغاز ہو جائیگا۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر


loading...