پاناما کیس : نواز لیگ نے فیصلہ خلاف آنے پر عام انتخابات کرانے پر غور ، مریم نواز کو لاہور سے کھڑا کرنے کا فیصلہ

پاناما کیس : نواز لیگ نے فیصلہ خلاف آنے پر عام انتخابات کرانے پر غور ، مریم ...
پاناما کیس : نواز لیگ نے فیصلہ خلاف آنے پر عام انتخابات کرانے پر غور ، مریم نواز کو لاہور سے کھڑا کرنے کا فیصلہ

  


اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن )کئی ماہ تک زیر سماعت رہنے والے ملکی سیاسی نوعیت کے سب سے بڑے ” پاناما کیس“ کا فیصلہ کسی بھی وقت آسکتا ہے اور اب انکشاف ہوا ہے کہ مسلم لیگ نواز نے فیصلہ وزیر اعظم کے خلاف آنے پر ملک میں فوری انتخابات کرانے پر غور شروع کر دیا جبکہ مریم نواز کو لاہور سے الیکشن لڑانے کا فیصلہ بھی کر لیا گیا ہے۔

دنیا نیوز کے مطابق پاناما کیس کا فیصلہ محفوظ ہونے کے بعد حکمران جماعت مسلم لیگ نوازکی اعلیٰ قیادت نے 3ہفتوں میںکئی بار مشاورت کی ہے جس میں وزیر اعظم کی صاحبزادی مریم نواز کو لاہور سے الیکشن لڑوانے کا حتمی فیصلہ کیا گیا ہے جبکہ فیصلہ پاناما کیس کا فیصلہ توقع کے برعکس آنے کی صورت میں عوامی عدالت سے رجوع کرنے پر بھی غور جاری ہے۔

عمران خان اور جہانگیر ترین کی ناہلی کیلئے دائر ریفرنسز پر فیصلہ آج سنایا جائے گا

ذرائع کا کہنا ہے کہ نون لیگ کو عدالت سے سرخرو ہونے کا یقین ہے پھر بھی تمام ممکنات پر تبادلہ خیال کیا جا رہا ہے۔ حکومتی قانونی ماہرین پرامید ہیں کہ تحریک انصاف نے ایسی قانونی بنیاد فراہم نہیں کی جس کی بنیاد پر وزیر اعظم کو گھر بھیجا جا سکے۔ مشاورتی اجلاسوں میں 90 فیصد رہنماو¿ں نے رائے دی کہ فیصلہ اگر خلاف آئے تو عوامی عدالت سے رجوع کیا جائے۔

ذرائع کے مطابق لیگی رہنماو¿ں کا کہناہے کہ الیکشن کیلئے مسلم لیگ ن کی تیاری مکمل ہے جبکہ پیپلز پارٹی سندھ تک محدود ہے۔ تحریک انصاف انتخابی تیاری کے بجائے سارا وقت احتجاجی سیاست میں لگی رہی ہے۔ ذرائع کے مطابق، الیکشن جب بھی ہوئے مریم نواز لاہور سے الیکشن لڑیں گی۔ تمام لیگی وزراءاور رہنماو¿ں نے نواز شریف پر مکمل اعتماد کا اظہارکیا ہے۔

مزید : قومی


loading...