امریکہ کے اتحادی نے دو لاکھ کی چیز گرانے کے لئے 30 کروڑ روپے کا میزائل چلادیا، دفاعی ماہرین اس حرکت پر سر پکڑ کر بیٹھ گئے

امریکہ کے اتحادی نے دو لاکھ کی چیز گرانے کے لئے 30 کروڑ روپے کا میزائل چلادیا، ...
امریکہ کے اتحادی نے دو لاکھ کی چیز گرانے کے لئے 30 کروڑ روپے کا میزائل چلادیا، دفاعی ماہرین اس حرکت پر سر پکڑ کر بیٹھ گئے

  


واشنگٹن (مانیٹرنگ ڈیسک) مچھر مارنے کیلئے گولی چلانا یقینا دانش مندی نہیں ہے، لیکن اگر کوئی چند ہزار روپے کے عام ڈرون کو گرانے کیلئے کروڑوں کا میزائل چلا دے تو آپ اسے کیا کہیں گے ؟

ویب سائٹ Cnet کی رپورٹ کے مطابق یہ بات مذاق نہیں ہے بلکہ واقعی کسی نے 200 ڈالر (تقریبا ً20 ہزار پاکستانی روپے ) کے معمولی ڈرون کو نشانہ بنانے کیلئے 30 لاکھ ڈالر (تقریباً 30 کروڑ پاکستانی روپے ) کا پیٹریاٹ میزائل چلا ڈالا ہے۔ یہ حیرتناک انکشاف امریکی آرمی ٹریننگ اینڈ ڈاکٹرن کے کمانڈر جنرل ڈیوڈ جی پرکنز نے کیا ہے۔

پیر کے روز جنرل ڈیوڈ کی ایک ویڈیو یوٹیوب پر سامنے آئی جس میں انہوں نے بتایا ” (امریکا کے) ایک اتحادی (ملک) نے جو کہ اپنے دشمن کے ساتھ نمٹ رہا ہے، ایما زون سے 200 ڈالر میں ملنے والے کواڈ کاپٹر کو گرانے کیلئے پیٹریاٹ میزائل استعمال کیا ہے۔“ ان کی بات سے یہ اندازہ لگانا مشکل نہیں کہ یہ کوئی افسانوی بات نہیں ہے، اور یقینا ٹریننگ کی بات بھی نہیں ہو رہی، بلکہ حقیقی جنگ میں پیش آنے والا واقعہ بتایا گیا ہے ۔

بدعنوانی کا سب سے بڑا سکینڈل،امریکی بحریہ کے مزید 8 افسران پر فرد جرم عائد

واضح رہے کہ روزمرہ کاموں کیلئے استعمال ہونے والے چھوٹے ڈرون چند ہزار روپے میں دستیاب ہوتے ہیں ۔ کواڈ کاپٹر (4 پنکھوں والا ) چھوٹا ڈرون بھی ایک ایسی ہی مثال ہے، جو انٹرنیٹ کی متعدد ویب سائٹوں سے چند ہزار روپوں میں مل جاتا ہے۔ اس کی ایک مثال ہمارے ہاں جلسوں کی کوریج کیلئے استعمال ہونے والا ڈرون بھی ہے، جس میں کیمرہ لگا ہوتا ہے اور یہ جلسے کے شرکاءکے اوپر منڈلاتا نظر آتا ہے۔ دوسری جانب پیٹریاٹ میزائل انتہائی جدید ٹیکنالوئی کا حامل اور ریڈار سے رہنمائی لینے والا خطرناک میزائل ہے جسے عموماً دوسرے میزائلوں کو مار گرانے کیلئے استعمال کیا جاتا ہے۔ جنرل ڈیوڈ کے مطابق ایک پیٹریاٹ میزائل کی قیمت 30 لاکھ ڈالر ( تقریبا ً 30 کروڑ پاکستانی روپے ) ہے ۔

مزید : بین الاقوامی


loading...