بھارتی حکومت نے عوام کو ٹوائلٹ دینے کی بجائے ایسی چیز تھمادی کہ سن کر ہر بھارتی حیران رہ جائے گا

بھارتی حکومت نے عوام کو ٹوائلٹ دینے کی بجائے ایسی چیز تھمادی کہ سن کر ہر ...
بھارتی حکومت نے عوام کو ٹوائلٹ دینے کی بجائے ایسی چیز تھمادی کہ سن کر ہر بھارتی حیران رہ جائے گا

  


نئی دلی (نیو زڈیسک ) بھارتی ’ترقی‘ کے دلچسپ و عجیب نمونے تو پہلے بھی دیکھنے میں آتے تھے لیکن وزیر اعظم نریندر مودی کے دور میں یہ ملک کچھ ایسی رفتار اور انداز میں ’ترقی‘ کرنے لگا ہے کہ دنیا واقعی حیرت زدہ رہ گئی ہے۔ بھارتی حکومت اپنے کروڑوں عوام کو ٹوائلٹ کی سہولت تو نہیں دے پائی البتہ انٹرنیٹ کو بنیادی انسانی حق قرار دے کر مفت وائی فائی دینے کا اعلان ضرور کر دیا ہے۔

دی انڈی پینڈنٹ کی رپورٹ کے مطابق ریاست کیرالہ کے وزیر خزانہ تھامس آئزک نے اعلان کیا کہ ان کی ریاست کے 3 کروڑ عوام کو مفت وائی فائی کی سہولت فراہم کی جائے گی۔ ان کا کہنا تھا ” انٹرنیٹ اب ہر شخص کا حق ہو گا۔ ڈیڑھ سال کے دوران ’کے۔ فون‘ نیٹ ورک کے ذریعے انٹرنیٹ گیٹوے قائم کی جائے گی تاکہ پوری ریاست میں مفت انٹرنیٹ کی فراہمی ممکن ہو سکے۔ “

’دن میں صرف دوبار ٹوائلٹ جانے کی اجازت‘ ہنگامے پھوٹ پڑے، پولیس طلب

اس منصوبے کو ’کے۔ فون‘ کا نام دیا گیا ہے اور اس کے تحت پوری ریاست میں آبٹیکل فائبر کیبلز کا جال بچھا کر گھروں میں بھی تیز ترین انٹرنیٹ فراہم کرنے کا اعلان کیا گیا ہے۔ حکومتی اعلان پر بھارتی عوام سوچ میں پڑ گئے ہیں کہ کہیں یہ ایک اور سبز باغ تو نہیں؟

مزید : ڈیلی بائیٹس


loading...