ہائیکورٹ نے محکمہ پولیس سے ریٹائرڈ فوجی اہلکاروں کی برطرفیاں روک دیں

ہائیکورٹ نے محکمہ پولیس سے ریٹائرڈ فوجی اہلکاروں کی برطرفیاں روک دیں
ہائیکورٹ نے محکمہ پولیس سے ریٹائرڈ فوجی اہلکاروں کی برطرفیاں روک دیں

  


لاہور(نامہ نگار خصوصی)لاہور ہائیکورٹ نے محکمہ پولیس سے ریٹائرڈ فوجی اہلکاروں کی برطرفیاں روکتے ہوئے آئی جی پولیس پنجاب سے تین ہفتوں میں جواب طلب کر لیاہے، عدالت نے ریٹائرڈ فوجی اہلکاروں کی مستقلی سے متعلق تمام درخواستیں بھی یکجا کرنیکی ہدایت کی ہے۔

ہالینڈ حکومت مسلم مخالف بیانات پر سخت اقدامات کرے: او آئی سی

جسٹس شاہد مبین نے نور محمد سمیت 53 ریٹائرڈ فوجی اہلکاروں کی درخواست پر سماعت کی، درخواست گزاروں کی طرف سے طلعت فاروق شیخ ایڈووکیٹ نے موقف اختیار کیا کہ ریٹائرڈ فوجی اہلکار 9 برسوں سے محکمہ پولیس میں کام کر رہے ہیں لیکن ان اہلکاروں کو مستقل کرنے کی بجائے محکمہ پولیس نے برطرفی کے نوٹسز بھجوا دیئے ہیں جو غیرقانونی اقدام ہے، انہوں نے استدعا کی کہ محکمہ پولیس سے ریٹائرڈ فوجی اہلکاروں کی برطرفیاں روکنے کا حکم دیا جائے، ابتدائی سماعت کے بعد عدالت نے حکم امتناعی جاری کرتے ہوئے آئی جی پولیس سے تین ہفتوں میں جواب طلب کر لیا اور اہلکاروں کی مستقلی سے متعلق تمام درخواستیں بھی یکجا کرنے کا حکم دے دیا ہے۔

مزید : لاہور


loading...