اضافی چارجز ،2 کروڑ 60 لاکھ روپے سابق چیئرمین پی سی بی زاہد علی اکبر کو واپس کئے جائیں،ہائی کورٹ کا نیب کوحکم

اضافی چارجز ،2 کروڑ 60 لاکھ روپے سابق چیئرمین پی سی بی زاہد علی اکبر کو واپس ...
اضافی چارجز ،2 کروڑ 60 لاکھ روپے سابق چیئرمین پی سی بی زاہد علی اکبر کو واپس کئے جائیں،ہائی کورٹ کا نیب کوحکم

  


لاہور(نامہ نگار خصوصی)لاہور ہائیکورٹ نے ناجائز اثاثہ کیس میں نیب کو اضافی چارجز کی مد میں وصول کردہ 2 کروڑ 60 لاکھ روپے سابق چیئرمین پی سی بی جنرل ریٹائرڈ زاہد علی اکبر کو واپس کرنے کا حکم دے دیا۔

انرجی ڈرنک پینے کی وجہ سے لڑکی پر فالج کا حملہ جسم کا دایاں حصہ مکمل مفلوج ہوگیا

جسٹس علی باقر نجفی کی سربراہی میں دو رکنی بنچ نے فیصلہ سنایاہے، زاہد علی اکبر کے وکیل اسد منظور بٹ نے موقف اختیار کیا کہ نیب نے ناجائز اثاثوں کی بنیاد پر دو ہزار چھ میں ملزم کیخلاف ریفرنس درج کیا، اس ریفرنس میں ملزم نے پلی پارگین کے تحت نیب کو 200 ملین روپے واپس کر دیئے، نیب کے ریکارڈ کا جائزہ لینے کے بعد پتہ چلا کہ نیب نے مختلف چارجز کی مد میں دو کروڑ ساٹھ لاکھ روپے زائد وصول کئے ہیں، نیب کی طرف سے سپیشل ڈپٹی پراسکیوٹر رانا عارف نے موقف اختیار کیا کہ ملزم نے بطور چیئرمین واپڈا اور بطور چیئرمین پاکستان کرکٹ بورڈ ناجائز اثاثے بنائے، نیب نے ملزم سے کوئی اضافی چارجز وصول نہیں کئے، ملزم کی پلی بارگین کی درخواست میں بھی پندرہ فیصد اضافی چارجز کی وصولی کا ذکر نہیں ہے.

نیب کے وکیل نے مزید موقف اختیار کیا کہ اگر نیب کے اضافی چارجز کا معاملہ ہوا تو اس معاملے پر رٹ درخواست نہیں بلکہ اپیل دائر کی جا سکتی ہے، لہذا ملزم کی درخواست ناقابل سماعت قرار دیکر خارج کی جائے، عدالت نے تفصیلی دلائل سننے کے بعد نیب کو اضافی چارجز کی مد میں وصول کردہ دو کروڑ ساٹھ لاکھ روپے سابق چیئرمین پی سی بی جنرل ریٹائرڈ زاہد علی اکبر کو واپس کرنے کا حکم دے دیا ہے۔

مزید : لاہور


loading...