وزیر اعلیٰ پنجاب لیپ ٹاپ سکیم پر لاہور بورڈ نے رجسٹریشن فیس نافذ کردی

وزیر اعلیٰ پنجاب لیپ ٹاپ سکیم پر لاہور بورڈ نے رجسٹریشن فیس نافذ کردی
وزیر اعلیٰ پنجاب لیپ ٹاپ سکیم پر لاہور بورڈ نے رجسٹریشن فیس نافذ کردی

  


لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) وزیر اعلیٰ پنجاب لیپ ٹاپ سکیم پر لاہور بورڈ نے رجسٹریشن فیس نافذ کردی۔ یونیورسٹیز کی جانب سے مستحق طلبہ وطالبات کی فہرست بھیجنے کے باوجود بورڈ انتظامیہ یونیورسٹیز کے تصدیقی سرٹیفکیٹس طلب کر رہی ہے۔ یونیورسٹیز طلبہ وطالبات سے تصدیقی سرٹیفکیٹ کی مد میں 600سے 1000روپے وصول کرتی ہیں۔دو سال کے وقفے کے بعد پنجاب بھر کے طلبہ و طالبات میں ایک لاکھ سولہ ہزار لیپ ٹاپ میرٹ پرتقسیم کئے جائیں گے۔

پنجاب کا بجٹ پیش، سرکاری ملازمین کی تنخواہوں میں اضافہ، روزگار اور لیپ ٹاپ سکیم جاری رکھنے کافیصلہ، تعلیم کیلئے بجٹ کا 27 فیصد مختص

نجی ٹی وی چینل سٹی فورٹیٹوکے مطابق پنجاب حکومت دو سال کے وقفے کے بعد صوبے بھر کے ذہین اور قابل طلبہ وطالبات میں لیپ ٹاپ تقسیم کر رہی ہے۔ اس سال لیپ ٹاپ تقسیم کرنے کی ذمہ داری لاہور بور ڈ کو دی گئی ہے۔تمام سرکاری و نجی یونیورسٹیزاور کالجز نے میرٹ پر آنے والے طلبہ وطالبات کی فہرستیں بورڈ کو ارسال کردی ہیں۔ اس کے باوجو د لاہوربورڈ نے طلبہ و طالبات کو اپنے تعلیمی ادارے سے تصدیقی سرٹیفکیٹ لانے کی شرط عائد کردی ہے۔تصدیقی سرٹیفکیٹ کی مد میں طلبہ وطالبات کو اپنے تعلیمی ادارے کو 600سے1000روپے تک رجسٹریشن فیس ادا کرنا پڑتی ہے۔یونیورسٹیز نے مﺅقف اختیار کیا ہے کہ تصدیقی سرٹیفکیٹ کی فیس یونیورسٹیز سنڈیکیٹ کی جانب سے رکھی گئی ہے جو طلبہ و طالبات سے سنڈیکیٹ کے فیصلے کے مطابق لی جاتی ہے۔

مزید : لاہور


loading...