سندھ، پنجا ب میں کرونا کے مزید 19مریض، بلوچستان میں 4محکموں کے سواء تمام سرکاری ادارے بند سندھ میں ایمرجنسی، پنجاب میں دفعہ 144نافذ آزاد کشمیر میں بھی تعلیمی ادارے بند، تقریبات پر پابندی

      سندھ، پنجا ب میں کرونا کے مزید 19مریض، بلوچستان میں 4محکموں کے سواء تمام ...

  

لاہور، اسلام آباد، کوئٹہ، کراچی (جنرل رپورٹر، نیوز ایجنسیاں)صوبہ سندھ اور پنجاب میں کرونا وائرس کے مزید 19 کیسز کی تصدیق ہوئی ہے جس کے بعد ملک بھر میں متاثرہ افراد کی تعداد 53 تک جاپہنچی ہے۔وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ کا کہنا ہے سکھر سے آئے ہوئے 40 نمونے ٹیسٹ کیے گئے ہیں جن میں سے 13 مثبت آئے ہیں۔انہوں نے بتایا سکھر میں 293 زائرین تفتان سے آئے ہیں۔ ہمیں بہت زیادہ احتیاط کی ضرورت ہے اور مزید ادویات اورسٹاف سکھر بھیج رہا ہوں۔قبل ازیں محکمہ صحت سندھ کے مطابق کراچی میں کورونا وائرس کے مزید 4 کیسز کی تصدیق ہوئی ہے۔حکام کا کہنا ہے کہ تین مریض کچھ دن قبل سعودی عرب سے واپس آئے تھے جبکہ ایک مریض کی کوئی ٹریول ہسٹری نہیں ہے۔بعد ازاں سندھ کے حکومت کے ترجمان مرتضیٰ وہاب نے ٹوئٹ کرکے بتایا گزشتہ رات بلوچستان سے کراچی آنیوالے شہری کا بھی کورونا وائرس ٹیسٹ مثبت آیا ہے جس کے بعد آج کراچی میں متاثرہ مریضوں کی تعداد 5 ہوگئی ہے۔محکمہ صحت کے مطابق صوبے میں کورونا وائرس کے کیسز کی تعداد 35 ہوگئی جن میں سے 2 مریض صحتیاب ہو کر گھر جاچکے ہیں۔علاوہ ازیں علامہ اقبال انٹر نیشنل ایئرپورٹ پر سعودی عرب سے آنیوالے 3مسافرمشتبہ قرار دے کر آئیسولیشن وارڈ میں منتقل کر دئیے گئے۔مسافر پی آئی اے کی پرواز پی کے740سے جدہ سے لاہور پہنچے تھے۔مسافر وں میں صادق محمد،حاجی دین محمد اور سلطان خان شامل ہیں۔تینوں مسافروں کی لاہور ایئرپورٹ پر جدید تھرمو اسکینر کے ذریعے اسکریننگ کی گئی تو دوران اسکریننگ مسافروں میں تیز بخار فلو کی شکایت پائی گئی۔تینوں مسافروں کو فوری طور پر آئیسولیشن وارڈ منتقل کردیا گیا جس کے بعد انہیں لاہور کے سروسز ہسپتال منتقل کردیا گیالاہور میں کرونا کا پہلا مریض سامنے آنے کے بعد پنجاب میں دفعہ 144 نافذ کر دی گئی،جس کے تحت 4 سے زائد افراد کے ایک جگہ اکٹھے ہونے پر پابندی ہو گی۔4 روز قبل دبئی سے لاہور آنے والے ایک مسافر نے شبہ ہونے پر ٹیسٹ کرایا، نجی لیبارٹری نے مریض میں کورونا وائرس کی تصدیق کی۔پنجاب حکومت کی ترجمان مسرت چیمہ نے بھی صوبے میں پہلے کیس کی تصدیق کی ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ متاثرہ مریض کو میو اسپتال کے آئسولیشن وارڈ میں رکھا گیا ہے جبکہ اس کے اہل خانہ اور گھر کے ملازمین کے ٹیسٹ منفی آئے ہیں۔دوسری جانب چیف سیکرٹری پنجاب کا کہنا ہے کہ وزیرصحت پنجاب ڈاکٹر یاسمین راشد کی سربراہی میں ہونے والے اجلاس میں صوبے میں دفعہ 144 نافذ کرنے کا فیصلہ کیا گیا۔کورونا وائرس کے پھیلاؤ اور حفاظتی تدابیر کے حوالے سے چیف سیکرٹری پنجاب میجر (ر) اعظم سلیمان خان اور وزیر صحت ڈاکٹر یاسمین راشد کی زیر صدارت ہنگامی اجلاس منعقد ہوا۔ چیف سیکرٹری اور وزیر صحت نے کہا کہ تمام سٹیک ہولڈرز، ماہرین صحت،ڈاکٹرز،پیرا میڈیکل سٹاف، علما،ماہر نفسیات، قانون نافذ کرنے والے اداروں، اساتذہ اور شہریوں کو اس ایمرجنسی کا مقابلہ کرنے کیلئے اپنا اپنا کردار ادا کرنا ہوگا۔اجلاس میں ایڈیشنل چیف سیکرٹری ہوم مومن آغا، آئی جی پنجاب شعیب دستگیر، محکمہ صحت کے سیکرٹریز،ِکمشنر لاہور، بہاولپور کے علاوہ سیکرٹری فوڈ،سی سی پی او لاہور اور دیگر افسران نے شرکت کی۔ تمام کمشنرز، ڈپٹی کمشنرز،آرپی اوز اور ڈی پی اوز نے ویڈیو لنک کے ذریعے اجلاس میں شرکت کی۔اجلاس میں کہا گیا کہ صوبے بھر میں ہینڈ سینی ٹائزرکی ذخیرہ اندوزی اور گراں فروشی کے علاوہ تمام سرکاری اور پرائیویٹ تعلیمی اداروں کوکھولنے،ہر قسم کے امتحانات منعقد کرنے، مذہبی اور عوامی اجتماعات، سپورٹس فیسٹول کے انعقاد کے خلاف تین ہفتے کیلئے دفعہ 144 نافذ کر دی گئی ہے۔تمام تعلیمی ادارے مکمل طور پر بند رہیں گے، ٹیچنگ سٹاف کے داخلے پربھی پابندی ہوگی،تمام پارکس، چڑیا گھر اور دیگر تفریحی مقامات کو بھی عوام کے لئے بند رکھا جائے گا۔ایران اور دیگر علاقوں سے زائرین کو لانے والی بسوں کو ڈس انفیکٹڈ کیاجائے گا۔ا جلاس میں زائرین کے لواحقین کو احتیاطی تدابیر کے بارے میں ویڈیوز کے ذریعے آگاہ کرنے اور علما ء کی مدد لینے کا فیصلہ کیا گیا۔اجلاس میں لاہور،ملتان اور راولپنڈی کے بعد باقی چھ ڈویژن میں ایک ایک ہسپتال کو کورانا کے مریضوں کے لئے مختص کرنے کا فیصلہ کیا گیا۔ اجلاس میں تمام پرائیویٹ لیبز کو حکومت کی طرف سے کورونا وائرس کے ٹیسٹ کے لئے سرکاری کٹس فراہم کرنے کی تجویز پر بھی غور کیا گیا۔ یاسمین راشد نے کہا کہ کٹس فراہم کرنے کا مقصد لوگوں کو کورونا ٹیسٹ کی سستی سہولت فراہم کرنا ہے۔ چیف سیکرٹری نے حکم دیا کہ نیشنل ایمرجنسی کے دوران اشیائے خوردونوش کی ذخیرہ اندوزی کرنے والوں کے خلاف سخت ترین کارروائی کی جائے،۔ آئی جی پنجاب نے بتایا کہ حفاظتی اقدام کے طور پرتمام پولیس ٹریننگ سنٹرز میں ٹریننگ سیشنز کو روک دیا گیا ہے،پولیس لائنز میں جوانوں کی پریڈ پر پابندی عائد کردی گئی،پولیس لائنز میں کورونا وائرس سے متعلق آگاہی کیلئے جوانوں کی تربیت جاری ہے،محکمہ پولیس میں ہرقسم کے محکمانہ ترقی کے امتحانات ملتوی کردیئے گئے ہیں۔ پنجاب پولیس کیلئے کالاشاہ کاکو کے قریب فوری طو رپر کورنٹین سنٹر قائم کرنے کافیصلہ کیا گیا ہے۔چیف سیکرٹری پنجاب نے کہا کہ گھروں کی چار دیواری کے اندر شادی بیاہ کی تقریبات کی اجاز ت ہوگی۔ ڈاکٹر یاسمین راشد نے بتایا کہ محکمہ صحت پنجاب نے کرونا وائرس کے حوالے سے عوام کی مدد کیلئے خصوصی ہیلپ لائن1033 قائم کردی ہے۔علاوہ ازیں کورونا و ائرس کی وجہ سے پولیس نے شہر بھر میں ایکسرسائزجم اور سنوکرکلب بھی بند کروا دئیے۔مالکان کا کہنا ہے کہ پولیس نے زبردستی سنوکر کلب اورجم بند کروائے،تحریری نوٹس مانگنے پر پولیس اہلکاروں نے صرف افسران بالا کا حکم کہہ کر کاروباربند کروادیا۔ سندھ اور پنجاب میں کورونا وائرس کے نئے مریضوں کی تصدیق کے بعد ملک میں متاثرہ مریضوں کی مجموعی تعداد 53 ہوگئی ہے۔ اعداد و شمار میں بتایا گیا ہے کہ سندھ سے 35، بلوچستان میں 10، اسلام آباد میں 4، گلگت بلتستان میں 3 اور لاہور میں ایک مریض ہے۔ کورونا وائرس کے خطرے کے پیشِ نظر بلوچستان حکومت نے 5 محکموں کے علاوہ دیگر تمام صوبائی محکموں کے دفاتر 22 مارچ تک بند کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔بلوچستان حکومت کے فیصلے کے مطابق صرف محکمہ نظم ونسق، داخلہ، صحت، خزانہ اور محکمہ ترقیات کے دفاتر کھلے رہیں گے، اس کے علاوہ تمام سرکاری محکموں کے دفاتر بند رہیں گے۔امریکا سے اسلام آباد آنے والی خاتون میں گزشتہ روزکررونا کی تصدیق ہوئی تھی تاہم اب زیرِ علاج خاتون کے شوہر میں بھی وائرس کی تصدیق ہو گئی ہے۔پمز حکام کے مطابق کورونا وائرس سے متاثرہ میاں بیوی کو پمز کے آئسولیشن وارڈ میں رکھا گیا ہے جس کے بعد اسپتال میں کورونا سے متاثرہ مریضوں کی تعداد 4 ہو گئی ہیحکومت پنجاب نے کرونا وائرس سے نمٹنے کیلئے اقدامات تیز کر دیئے جس کے تحت کمانڈ اینڈ کنٹرول سینٹر میدان میں آگیا، لاہور ائیرپورٹ پر جراثیم کش ادویات کا چھڑکاؤ شروع کردیا گیا۔ ہوائی اڈے کو محفوظ بنانے کیلئے وی آئی آر او ایس ٹیکنالوجی کا استعمال کیاجارہا ہے جس سے جراثیم کا 3 سے 5 منٹ میں خاتمہ ہوگا۔ لاہور میں نامکمل انتظامات پرسروسز ہسپتال کے ایم ایس ڈاکٹر سلیم چیمہ کو تبدیل کر دیا گیا،ڈاکٹر افتخار کو ایم ایس کا چارج دے دیا گیا۔بلوچستان میں بھی حکومت کی جانب سے کئے گئے اقدامات کے تحت پاک افغان سرحد 13ویں اور پاک ایران بارڈر 22روز سے بند ہے۔تفتان میں زیرپوائنٹ پر بھی دو طرفہ مقامی تجارتی سرگرمیاں معطل ہے۔ تفتان باڈر سے مزید 155افراد پاکستان میں داخل ہوئے، جنہیں اسکریننگ کے بعد قرنطینہ منتقل کردیا گیا۔ ایرانی سرحد کے قریب محکمہ صحت اور پاک فوج کا میڈیکل کیمپس بھرپور کام کررہا ہے جہاں ڈاکٹرز سمیت دیگر عملہ بھی موجود ہے کرونا وائرس کے خطرے کے پیش نظر راولپنڈی کے سرکاری ہسپتالوں میں انتظامات مکمل کرلئے گئے ہیں، کرونا وائرس کے مریضوں کے 35 وینٹیلیٹرز اور الگ الگ وارڈز بھی قائم کر دیئے گئے۔کو ڈی آئی خان میں دفعہ 144نافذ کردی گئیاحتیاطی تدابیر کے طور پر مختلف تقاریب، تہوار،میٹنگ، مجالس،جلسے، میلے اور اجتماعات پر بھی پابندی عائد کی گئی ہے۔ضلعی انتظامیہ کا کہنا ہے کہ شہریوں کی جانب سے جلسے جلوس اور موسیقی کے پروگرام پر عائد پابندی کی خلاف ورزی کرنے پر قانونی کارروائی ہوگی۔وزارت خارجہ نے ملازمین کے تحفظ کیلیے کورونا سے بچاؤ، احتیاطی تدابیر اور اقدامات کے حوالے سے وزارت خارجہ میں خصوصی ٹاسک فورس قائم کر دی۔ترجمان دفتر خارجہ کے مطابق ٹاسک فورس پاکستان میں موجود غیر ملکی اورساتھ ساتھ بیرون ملک مقیم پاکستانی مشنز سے بھی رابطہ رکھے گی،فورس میں ڈی جی ہیڈ کوارٹرز شامل ہیں جبکہ گریڈ 17 کے چند افسران کو بھی ٹاسک فورس کاحصہ بنایاجائیگا،وزیراعظم آزاد جموں و کشمیر راجہ محمد فاروق حیدر خان کی زیرصدارت اجلاس میں کروناوائرس Novel Corona Virus(Covid-19کی روک تھام کیلئے فیصلوں پر عملدرآمد کے سلسلہ میں محکمہ سروسز اینڈ جنرل ایڈمنسٹریشن نے سرکاری محکموں،پرائیویٹ اداروں و عام شہریوں کے لئے حکومتی احکامات پر عملدرآمد کے احکامات پر مبنی نوٹیفیکیشن جاری کردیا۔نوٹیفیکیشن کے مطابق جملہ تعلیمی ادارے (سرکاری و پرائیویٹ)بشمول یونیورسٹیز،سکولز،کالجز،ٹیکنیکل ادارے،میڈیکل کالجز آئندہ تین ہفتوں کیلئے بند رہیں گے،تمام امتحانات جو شروع ہو چکے یا آئندہ تین ہفتوں کے دوران شروع ہوں گے منسوخ تصور ہوں گے اس دوران جملہ ٹیوشن سنٹرز بھی بند رہیں گے،تمام اقامتی دینی مدارس آئندہ تین ہفتوں تک بند رہیں گے تاہم صرف غیر ملکی طلبہ کو مدارس کے ہاسٹل میں رہائش کی اجازت دی جا سکتی ہے۔ محکمہ مال اور دیوانی عدالتوں میں عوام کی بغیر جواز آمد ورفت سے حتی المقدور اجتناب کیا جائے گا۔ جملہ سرکاری دفاتر میں ملازمین کے علاوہ دیگر افراد کی صرف ناگزیر صورت میں ہی رسائی ممکن ہو گی،جملہ شادی و ضیافت ہال وغیرہ آئندہ تین ہفتوں تک بند رہیں گے علاوہ ازیں اس دوران شادی کی بڑی تقریبات کا انعقاد نہیں کی جائے گا،جملہ مذہبی اجتماعات اور دیگر تقریبات ماسوائے نماز پنجگانہ اور جمعہ آئندہ تین ہفتے تک معطل رہیں گی،تمام نجی و سرکاری کھیلوں کی سرگرمیاں،جشن،تہوار،عرس اور میلہ جات وغیرہ آئندہ تین ہفتے تک منسوخ رہیں گے،قیدیوں سے آئندہ تین ہفتے تک ملاقات پر پابندی رہے گی،تمام اقسام کیعوامی۔ صوبہ پنجاب کے تمام ہسپتالوں میں بائیو میٹرک حاضری پر پابندی عائد کردی گئی۔ مراسلہ میں کہا گیا ہے کہ ہسپتالوں اورمراکزصحت کے ملازمین بائیومیٹرک حاضری نہ لگائیں، بائیو میٹرک حاضری لگانے سے کورو نا وائرس منتقل ہونے کا خدشہ ہے تمام ملازمین کیلئے کاغذی حاضری کے انتظامات کرنے کی ہدایت بھی جاری کردی گئی ہے، محکمہ پرائمری ہیلتھ کئیر کے ملازمین کی صحت کے پیش نظر فیصلہ کیا گیا ہے صوبے کے تمام ہسپتالوں کے ایم ایس، سی ای اوز کو مراسلہ ارسال کردیا گیا ہے

پاکستان کرونا

واشنگٹن،لندن، روم،برسلز،تہران (مانیٹرنگ ڈیسک،نیوز ایجنسیاں) جان لیوا کرونا وائرس دنیا کے 156 ممالک میں پھیل گیا۔ چوبیس گھنٹوں میں وائرس سے 245 افراد ہلاک ہوئے جبکہ 10ہزار 929 نئے کیسز سامنے آئے ہیں۔ اٹلی میں ایک ہی روز 268افراد ہلاک ہو گئے،ایران میں کرونا وائرس سے مزید 113 افراد جاں بحق ہو چکے ہیں جبکہ متاثرین کی تعداد 13 ہزار 938 ہو گئی ہے۔ سپین میں 99 افراد کی وائرس سے اموات ہوئی جبکہ ایک ہزار 362 نئے کیسز سامنے آئے۔چین میں مزید دس افراد وائرس سے ہلاک، نیدرلینڈ میں 8، امریکا، جنوبی کوریا، اور فلپائن میں 3، 3، جاپان، آسٹریلیا میں 2،2، جرمنی، سوٹزرلینڈ، ڈنمارک، یونان اور الجزائر میں 1،1 نئی اموات رپورٹ ہوئیں۔انڈیا میں 8 نئے مریض رپورٹ ہونے کے بعد مبتلا افراد کی تعداد 108 ہوگئی۔ افغانستان میں 5 نئے کیسز کی تصدیق کے بعد متاثرین 16 ہو گئے۔ادھر فلسطین میں کرونا وائرس کے باعث مسجد الاقصیٰ کو بند کر دیا گیا ہے۔ مصر نے تعلیمی اداروں کو دو ہفتوں کے لئے بند کرنے کا اعلان کر دیا ہے۔برطانیہ نے 70 سال سے بڑی عمر کے افراد کو 4 ماہ تک قرنطینہ میں رکھنے کا اعلان کیا ہے۔ آسٹریلیا نے پانچ افراد سے زائد کے اجتماع پر پابندی عائد کر دی ہے۔فرانس نے ٹرینوں، بسوں اور ہوائی جہازوں پر سفر کرنے پر پابندی لگانے کا اعلان کر دیا جبکہ چین نے بیجنگ آنے والے تمام غیر ملکی مسافروں کو لازمی قرنطینہ میں رکھنے کا فیصلہ کیا ہے۔ جو بھی غیر ملکی مسافر چین آئے گا اسے حکومت کے بنائے قرنطینہ میں کچھ وقت گزارنا ہوگا۔ ادھر انڈونیشا کے صدر نے بھی کرونا وائرس ٹیسٹ کروانے کا اعلان کر دیا ہے۔ کرونا وائرس کے باعث سعودی عرب نے انٹرنیشنل فلائٹ آپریشن 2 ہفتوں کے لیے معطل کردیا ہے۔سعودی نیوز ایجنسی کے مطابق کورونا وائرس سے بچاؤ اور حفاظتی اقدامات کے پیش نظر حکومت نے بین الاقوامی فلائٹ آپریشن 2 ہفتوں کے لیے معطل کردیا ہے۔سعودی حکومت کی جانب سے جاری مراسلہ کے مطابق فلائٹ آپریشن کی معطلی کے باعث سعودی عرب نہ پہنچنے والے تمام سعودی اور غیر ملکی شہریوں کی غیر حاضری کو غیر معمولی سرکاری چھٹیوں میں شمار کیا جائے گا۔پاکستان سے سعودیہ اور سعودیہ سے پاکستان آپریٹ ہونے والی ائیرلائنز کو فلائٹ آپریشن کی معطلی سے متعلق آگاہ کردیا گیا ہے، دوسری طرف اقامہ ہولڈرز کی سعودیہ اور سعودیہ سے عمرہ زائرین کی واپسی کا عمل بھی تیزی سے جاری ہے۔ترجمان ایوی ایشن ڈویڑن کا کہنا ہے کہ پاکستانی اتھارٹیز نے سعودیہ کو اوورسیز پاکستانیز اور اقامہ ہولڈرز کے لیے پروازیں 25 مارچ تک جاری رکھنے کی درخواست کی ہے جسے سعودی عرب نے منظور کر لیا ہیویٹی کن نے اتوار کو کہا ہے کہ رواں سال روایتی ایسٹر ہفتے کی تقریبات کرونا وائرس کی وجہ سے زائرین کے بغیر منعقد ہوں گی، ویٹی کن سٹی سے جاری بیان کے مطابق موجودہ عالمی پبلک ہیلتھ ایمرجنسی کی وجہ سے مقدس ہفتے کی تمام مذہبی تقریبات عقیدت مندوں کی جسمانی طورپر موجودگی کے بغیر منعقد ہوں گی۔ یہ آفس پوپ فرانسس کی عوامی تقریبات اور سربراہان مملکت اور دیگر شخصیات کیساتھ ان کی ملاقاتوں میں زیادہ تر رابطہ انچارج کا کردار اداکرتا ہے، ویٹی کن نے یہ بھی کہا کہ 12اپریل تک عام مذہبی اجتماعات اور پوپ کی جانب سے دعائیہ تقریبات آفیشل ویٹی کن نیوز ویب سائٹ پر صرف براہ راست دستیاب ہوں گیبھارت نے کورونا وائرس کے بڑھتے ہوئے کیسز کے سبب پاکستان کے ساتھ ملنے والی تمام سرحدیں بند کرنے کا اعلان کر دیا۔ بھارتی وزارت داخلہ کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا کہ پاکستان کے ساتھ تمام بارڈرز جہاں سے مسافروں کی آمدورفت ہوتی ہے15مارچ سے تا حکم ثانی بند کیے جا رہے ہیں۔اس کے علاوہ کرتار پور راہداری سے زائرین کی آمدورفت بھی تاحکم ثانی بند کرنے کا اعلان کیا گیا ہے۔براعظم افریقا میں کورونا وائرس تیزی سے پھیلنے لگا مزید چار ممالک میں متاثرین کی تصدیق ہوگئی۔غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق براعظم افریقا کے 54میں سے 23ممالک میں کورونا وائرس کی تصدیق ہوچکی ہے۔نمبیا، روانڈا، اسواتینی اور موریطانیہ میں ہفتے کو اولین کیس رپورٹ ہوئے۔ حکام کا کہنا ہے کہ تمام متاثرین بیرون ملک سے سفر کرکے واپس آئے تھے۔افریقی حکومتیں اور صحت عامہ سے متعلقہ ادارے وائرس کی روک تھام کے لیے اقدامات کررہے ہیں۔ براعظم افریقا کی 1.3ارب آبادی کو صحت کے کمزور انفرااسٹرکچر کی وجہ سے شدید خطرات لاحق ہوسکتے ہیں۔نکرونا وائرس کے پھیلا کے خدشے کے تحت عمان، اردن اور مصر میں اسکول بند کردیے گئے، مذکورہ ممالک میں وائرس سے بچنے کے لیے دیگر کئی اقدامات بھی کیے جارہے ہیں۔بین الاقوامی خبر رساں ادارے کے مطابق عمان، اردن اور مصر میں کرونا وائرس کے پھیلا کے خدشے کے تحت اسکول بند کردیے گئے ہیں۔ سلطنت عمان میں کرونا وائرس سے بچا کے لیے تمام تعلیمی ادارے اتوار سے ایک ماہ کے لیے بند کرنے کا اعلان کیا گیا ہے۔مصر میں بھی تمام تعلیمی ادارے 2 ہفتے کے لیے بند کرنے کے احکامات صادر کر دیے گئے ہیں۔افریقی عرب ملک مراکش کے وزیر ٹرانسپورٹ اورسپین کی خاتون اول کرونا وائرس کا شکار ہوگئی ہیں۔ اطلاعات کے مطابق مراکش کیوزیر برائے ٹرانسپورٹ عبدالقادر اعمارہ کا کرونا کا ٹیسٹ مثبت آیا ہے جس کے بعد انہیں ایک اسپتال میں الگ کردیا گیا ہے۔ مراکش میں اب تک کرونا کے کیسز کی تعداد 18 ہوگئی ہے۔۔اسپین کے وزیراعظم بیڈرو شانشیز کی اہلیہ بیگونیا گومیز کرونا وائرس کا شکار ہوگئی ہیں جس کے بعد انہیں قرنطینہ منتقل کیا گیا ہے۔اسپانوی وزیراعظم ہاؤس کی طرف سے جاری ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ خاتون اول گومیز کو حال ہی میں طبی معائنے کے لیے اسپتال منتقل کیا گیا تھا جہاں ان میں کرونا وائرس کی تصدیق کی گئی ہے۔متحدہ عرب امارات میں شامل دبئی نے کرونا وائرس کو پھیلنے سے روکنے کے لیے اتوار 15 مارچ سے اس ماہ کے آخرتک تمام تفریحی سرگرمیوں اور شادی کے اجتماعات پر پابندی عاید کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔میڈیارپورٹس کے مطابق دبئی کی حکومت کے میڈیا دفتر نے ایک ٹویٹ میں کہا کہ نائٹ کلبوں، سینماگھروں میں سرگرمیاں اور کنسرٹس کا انعقاد مارچ کے آخر تک معطل کیا جارہا ہے عالمی ادارہ صحت (ڈبلیو ایچ او) کی جانب سے یورپ کو اس عالمی وبا کا نیا مرکز قرار دیے جانے کے بعد متعدد ممالک نے اپنی سرحدیں بند کر دیں۔۔وائرس سے سب سے زیادہ متاثر ہونے والے یورپی ملک اٹلی میں ایک دن میں اب تک سب سے زیادہ 250 ہلاکتیں ہوئی جبکہ 3 ہزار سے زائد افراد کے وائرس سے متاثر ہونے کے بعد اسپین میں بھی ایمرجنسی نافذ کردی گئی۔اکثر یورپی ممالک نے غیر ملکیوں کے لیے اپنی سرحدیں بند کردی ہیں جبکہ تمام عوامی مقامات پر اجتماعات اور غیر ضروری سرگرمیوں پر پابندی لگا دی گئی ہیبھارتی ریاست مہاراشٹر میں کورونا وائرس کے 5 نئے کیسز کی تصدیق کے بعد بھارت میں کورونا کے کل مریضوں کی تعداد 93 ہوگئی۔میڈیارپورٹس کے مطابق بھارتی ریاست مہاراشٹر میں کورونا وائرس کے سب سے زیادہ کیسز رپورٹ ہوئے ہیں جہاں مریضوں کی تعداد 31 ہو چکی ہے۔بھارت کی ریاست کیرالہ میں 22، راجستھان میں 4، یوپی میں 11، کرناٹک میں 6 جبکہ د یگر ریاستوں میں بھی کورونا کے کیسز سامنے آئے ہیں۔تامل ناڈو میں کورونا وائرس کے خدشے کے پیش نظر مالز، تھیٹرز اور تلنگانہ میں اسکول و کالج بند کر دیئے گئے۔انڈامان اور نکو بار جزائر میں بھی کورونا کے باعث تمام سیاحتی سرگرمیاں معطل کرنے کا اعلان کیا گیا ہے، جبکہ آندھرا پردیش میں بلدیاتی انتخابات ملتوی کر دیئے گئے ہیں۔ایران میں کرونا وائرس حکومتی ذمے داران اور سیکورٹی فورسز کی صفوں میں پھیلتا جا رہا ہے۔میڈیارپورٹس کے مطابق ایرانی پاسداران انقلاب کے ترجمان بریگیڈیر جنرل رمضان شریف نے اعلان کیا تھا کہ پاسداران کے 5 ارکان کرونا وائرس میں مبتلا ہو کر فوت ہو گئے۔اس سلسلے میں تازہ ترین پیش رفت میں ایران کے جنوبی صوبے خوزستان کے گورنر غلام رضا شریعتی نے ایرانی فضائیہ میں کرونا وائرس کے پہلے دو کیسوں کا انکشاف کیا ہے۔ ایرانی میڈیا نے ہفتے کی شب شریعتی کے حوالے سے بتایا کہ مذکورہ دونوں اہل کاروں کا تعلق دزفول شہر میں واقع فورتھ ایئر بیس سے ہے۔کرونا وائرس کے پھیلا کے خدشے کی وجہ سے لگائی جانے والی امر یکی سفری پابندیوں نے نیا اقتصادی بحران پیدا کر دیا ہے۔میڈیارپورٹس کے مطابق امریکا نے سفری پابندیوں کا دائرہ کار 28 ممالک تک بڑھا کر برطانیہ اور آئرلینڈ سے آنے والے مسافروں پر بھی امریکا میں داخلے پر پابندی عائد کر دی ہے۔امریکی سفری پابندیوں کے باعث برطانوی ائیر لائنز پر قیامت ٹوٹ پڑی اور مشکلات کا شکار برٹش ائیر ویز کو مزید خسارے کا سامنا ہونے کا خدشہ ہے۔ خیال رہے کہ برٹش ائیر ویز کو لندن نیویارک پروازوں سے سالانہ 100 ارب ڈالر آمدنی حاصل ہوتی ہے۔دوسری جانب بدحالی کی شکار ورجن اٹلانٹک ائیرویز بھی برطانوی حکومت سے ساڑھے 7 ارب پانڈکے بیل آوٹ پیکیج کی منتظر ہے۔آسٹریلوی سائنسدانوں نے دعوی ٰکیا ہے کہ انہوں نے دنیا بھر میں پھیلنے والی عالمی وبا کورونا کی ویکسین تیار کرلی ہے۔ ایس اسپائک نامی ویکسین کوئنز لینڈ یونیورسٹی کے تین سائنسدانوں نے تیار کی ہے جسے آزمائشی مرحلے میں چوہوں پر آزمایا جا رہا ہے جب کہ اگلے مرحلے میں انسانوں پر آزمایا جائے گا۔ ماہرین کا کہنا ہے کہ ویکسین کی تیاری پر 20 سے 30 لاکھ ڈالر لاگت آئے گی اور بڑے پیمانے پر اس کی پیداوار چیلنج ہوگا۔آسٹریلوی سائنسدانوں کے مطابق مذکورہ ویکسین کی طبی آزمائش میں چند مہینے درکار ہیں۔ زبکستان میں اتوار کے روز اس وقت کرونا وائرس کے پہلے کیس کی تصدیق ہوئی جب فرانس سے واپس آنے والے ایک ازبک شخص کے کرونا ٹیسٹ کا نتیجہ مثبت آیا۔وزارت صحت کے تحت کام کرنے والی ایجنسی برائے سینٹری اور وباء سے متعلق نگرانی کے ادارے نے کہا ہے کہ وہ وسطی ایشیائی ملک میں وائرس کے خلاف اقدامت اٹھا رہے ہیں آسٹریلیا کے چیف میڈیکل آفیسر برینڈن مرفی نے اتوار کے روز کہا ہے کہ اب جبکہ آسٹریلیا میں کرونا وائرس کے کیسز 249 تک پہنچنے کے بعد تمام تر حفاظتی اقدامات بشمول لاک ڈاؤن پر غور کیا جارہا ہے۔مرفی نے آسٹریلین براڈ کاسٹنگ کارپوریشن (اے بی سی) کو بتایا کہ وائرس کے پھیلاؤ کو روکنے کے لئے جس طرح بعض یورپین ممالک نے اقدامات کئے ہیں اسی طرح آسٹریلیا میں بھی لاک ڈاؤن کا نفاذ کیا جاسکتا ہے)بنگلہ دیشن نے ہفتہ کی شب ملک میں کرونا وائرس کے 2 مزید کیسز کی تصدیق کے بعد برطانیہ کے سوا یورپ کے ساتھ پروازیں معطل کرنے کااعلان کیا ہے۔بنگلہ دیش کے وزیر خارجہ اے کے عبدالمومن نے ڈھاکہ میں میڈیا بریفنگ میں اعلان کیا کہ اس معطلی کا آغازہ پیر سے ہوگا اور 31 مارچ تک برقرار رہے گا

کرونا ہلاکتیں

مزید :

صفحہ اول -