کورونا وائرس ممکنہ خطرات کے پیش نظر پاک افغان بارڈربند

  کورونا وائرس ممکنہ خطرات کے پیش نظر پاک افغان بارڈربند

  

خیبر (عمران شینواری)کورونا وائرس ممکنہ خطرات کے پیش نظر پاک افغان بارڈر آج رات بارہ بجے ہر قسم آمد ورفت کیلئے بند کر دیا جائے گا بارڈر بند ش کی نوٹیفیکشن جا ری ہونے کے بعد دونوں اطراف ہزاروں کی تعداد میں لوگ جمع ہوگئے نادرا سٹاف سمیت دوسرے وسائل کی کمی کی وجہ سے لوگ شدید مشکلات سے دو چار ہو گئے بچے بوڑھے،خواتین مریضوں سمیت بری طرح پھنس گئے، لنڈیکوتل میں گیا رہ سنٹر قائم کئے گئے ہیں جس میں باہر ممالک سے آنے والے مسافروں کو رکھا جائے گا۔محکمہ صحت ذرائع کورونا وائر س ممکنہ خطرات کے پیش نظر پاک افغان بارڈر اتوار رات بارہ بجے سے چودہ دن کیلئے بند کر دیا جائے گاحکومت کی طرف سے نوٹیفیکشن جا ری ہونے کے بعد اور خبر سوشل میڈیا پر شیئر ہونے کے بعد دونوں ملکوں میں ہزاروں کی تعداد میں مسافر پاک افغان بارڈر طورخم پہنچ گئے ہیں ایک ساتھ ہزاروں کی تعداد میں لوگ جمع ہونے سے نادرا اورپولیس کیلئے بھی مسئلہ پیدا ہو گیا پیدل جانے والوں کیلئے جو راستے بنائے گئے وہ کم تنگ پڑگئے جس کی وجہ خواتین بچے اور بزرگ افراد سمیت مریضوں کو شدید مشکلات کا سامنا کر نا پڑا جبکہ نادرا میں سٹاف کی کمی سے بھی بہت زیا دہ مشکلات سامنے آگئے جبکہ ہیلتھ ذرائع کے مطابق کہ کورونا وائرس ممکنہ خطرات کے پیش نظرسکولوں،کالج ریلوے اسٹیشن اور وٹرنری ہسپتال میں گیا رہ سنٹر قائم کئے گئے ہیں جبکہ ضلع ہیڈ کوارٹر ہسپتال میں آئیسولیشن کورونا وارڈ قائم کیا گیا جس میں مشتبہ کورونا مریض کو رکھ پھر پولیس ہسپتال پشاور منتقل کیا جا ئے گا واضح رہے کہ گز شتہ روز سے لنڈیکوتل میں کورورنا وائرس سے علاقے میں مختلف پروپیگنڈے کئے جا رہے ہیں حجروں بازروں مسجدوں میں کورونا وائرس زیر بحث رہے اور ان سے بچاو کیلئے لوگ معلومات حاصل کر ہے ہیں گز شتہ روز ایران سے ایک مقامی شخص کو پشاور پولیس ہسپتال لے گیا تھا لیکن انکے تمام ٹیسٹ کلیئر ہونے کے بعد آج ڈس چارج کیا گیا

مزید :

پشاورصفحہ آخر -