انجمن تاجران تخت بھائی نے ایکسائز پرارپرٹی ٹیکس میں اضافہ مسترد کر دیا

  انجمن تاجران تخت بھائی نے ایکسائز پرارپرٹی ٹیکس میں اضافہ مسترد کر دیا

  

تخت بھائی (نما ئندہ پاکستان) انجمن تاجران تخت بھائی نے ایکسائز پرارپرٹی ٹیکس میں اضافے اور پر وفیشنل ٹیکس کو یکسر مسترد کرتے ہو ئے اسے تاجروں کی معاشی قتل قرار دیا۔ پراپرٹی ٹیکس عرصہ سے ڈسٹرکٹ گورنمنٹ وصول کررہی ہے۔ تاجروں کے جملہ حقو ق کے لئے کسی بھی قربانی سے دریغ نہیں کیا جائیگا۔ تاجروں کو درپیش مسا ئل کے حل کے لئے انتظا میہ فوری اور قابل عمل اقدا مات کریں۔ ان خیا لات کا اظہار انجمن تاجران تخت بھائی سٹی کے صدر حاجی طارق خان نے انجمن تاجران کے مرکزی کونسل کے اجلاس سے خطاب کرتے ہو ئے کیا۔ اس موقع پر تمام یونٹوں کے عہدیدار بھی مو جود تھے۔ اجلاس سے جنرل سیکرٹری وہاب یوسفی، میاں خالد شاہ، شیر ماما، لعل گل یوسفزئی، مطیع اللہ، قاضی جاوید، قاضی اقبال، عبدا لرؤف صدیقی اور دیگر نے بھی خطاب کیا۔ مقررین نے کہا کہ کمر توڑ مہنگائی نے عوام اور تاجروں کے لئے گھمبیر مسائل پیدا کیئے ہیں۔ اور دوسری طرف آئے روز ٹیکسو ں کی بھر مار سے تاجر طبقہ کا روبار چھوڑنے پر مجبور ہے۔ انہوں نے کہا کہ تاجر طبقہ پہلے سے ایکسائز پراپرٹی ٹیکس دو فیصد دے رہی ہے اس میں اچانک آٹھ فیصد اضافے کی تجویز بالکل نا منظور ہے۔ اسی طرح پرو فیشنل ٹیکس کو بھی مسترد کرتے ہیں جس کے خلاف نہ صرف بھر پور تحریک چھلائینگے بلکہ عدالت سے بھی رجوع کیا جائیگا۔ انہوں نے کہا کہ حکمران طبقہ مہنگائی کو روکنے کے لئے عوام اور تاجروں پر بوجھ ڈالنے کی بجائے ان کو مرا عات دیئے جائیں۔ انہوں نے کہا کہ آئے روز انتظا می آفسران کی ؤچھاپوں سے تاجر طبقہ پریشان ہے بھاری جر ما نوں سے تاجر طبقہ تنگ آکر بھر پور احتجاج کرنے پر مجبور ہونگے۔ انہوں نے کہا کہ تاجروں کا ایک وفد عنقریب اعلیٰ آفسران سے مل کر ان کو درپیش مسائل کے بارے میں تجاویز پیش کریگی۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -