خواتین ٹیچرز کو ہراساں کرنیکا معاملہ‘ ایم ای ایز کیخلاف اساتذہ تنظیموں کا شدید ردعمل

    خواتین ٹیچرز کو ہراساں کرنیکا معاملہ‘ ایم ای ایز کیخلاف اساتذہ تنظیموں ...

  

ملتان (سٹاف رپورٹر) اساتذہ تنظیموں نے ایم ای ایز کے گرلز پرائمری و ایلمنٹری سکولز کے وزٹ کے دوران مبینہ طور(بقیہ نمبر41صفحہ12پر)

پر خواتین اساتذہ کو بلیک میل و ہراساں کئے جانے کے واقعات پر تشویش کا اظہار کیا ہے۔ اساتذہ رہنماؤں کے مطابق گرلز سکولز میں ایم ای ایز کے داخلے اور مانیٹرنگ کی آڑ میں معلمات کو بلیک میل کئے جانے کی شکایات سامنے آرہی ہیں۔یہ بہت حساس معاملہ ہے‘ حالیہ گرلز ایلمنٹری سکول ہیڈ ٹیچر اور ایک مانیٹرنگ اہلکار کے مابین تلخ کلامی کا واقعہ لمحہ فکریہ ہے۔حکومت نے کچھ عرصہ قبل گرلز سکولوں پر مسئلہ اے ای اوز کو ہٹانے کا فیصلہ کیا تھاجس پر تاحال عملدرآمد نہیں کیا گیا‘اب مرد ایم ای ایزجو ریٹائر ملازمین ہیں اور ان کا محکمہ تعلیم سے دور کا بھی واسطہ نہیں ہے‘ ان کی طرف سے معلمات کو ہراساں کرنے کی شکایات بڑھ گئی ہیں۔اس لئے مرد ملازمین کے گرلز سکولز کی مانیٹرنگ پر پابندی عائد کی جائے اور گرلز سکولز کی مانیٹرنگ پر خواتین افسران و ملازمین تعینات کی جائیں۔اس بارے میں رابطہ کرنے پر محکمہ تعلیم سکولز کے حکام نے بتایا کہ مانیٹرنگ اہلکاروں کے رویے کے خلاف گرلز سکولز کی ہیڈ ٹیچرز و معلمات کے تحفظات سامنے آرہے ہیں مگر حکومت پنجاب کی طرف سے ریٹائر ملازمین سکولز کی مانیٹرنگ پر مامور کئے گئے ہیں‘اس بارے میں کوئی بھی فیصلہ حکومتی سطح پر ہی ہو سکتا ہے۔

ردعمل

مزید :

ملتان صفحہ آخر -