گندم خریداری مہم‘ تیاریاں مکمل‘ صوبہ بھر میں 382مراکز قائم

      گندم خریداری مہم‘ تیاریاں مکمل‘ صوبہ بھر میں 382مراکز قائم

  

ملتان (سپیشل رپورٹر) صوبائی کابینہ سے منظوری کے بعد محکمہ خوراک کی جانب سے باضابطہ طور پر گندم خریداری پالیسی جاری کردی گئی ہے۔محکمہ خوراک کی جانب سے تمام اضلاع کو باضابطہ طور پر گندم خریداری سے متعلق مراسلہ جاری کردیا گیا ہے جس کے مطابق صوبہ بھرمیں چھوٹے کاشتکاروں کے معاشی استحکام کیلئے صوبہ بھر میں 158ارب روپے کی (بقیہ نمبر10صفحہ12پر)

مالیت سے 45لاکھ میٹرک ٹن گندم 14سو روپے فی من کے حساب سے خرید کی جائے گی جبکہ ڈلیوری چارجز 9روپے فی 100کلو گرام مقرر کئے گئے ہیں۔گندم خریداری کیلئے صوبہ بھر میں 382گندم خریداری مراکز قائم کئے گئے ہیں جہاں گندم فروخت کرنے والے کاشتکاروں کو 100بوری تک کی تقد ادائیگی کی جائے گی گندم خریداری اوپن ہوگی اور اس کیلئے خسرہ گرداوری اور فرد ملکیت کی تصدیق ختم کردی گئی ہے کاشتکار پہلے آئیے پہلے پائیے کی بنیاد پر پہلی مرتبہ 100بوری تک باردانہ بنک کال ڈیپاز ٹ کے ذرائع حاصل کرسکیں گے جبکہ فی ایکڑ باردانہ کی شرط ختم کردی گئی ہے۔جبکہ کوئی بھی فرد یا ادارہ بغیر فوڈ گرین لائسنس کے گندم خرید کرنے یا ذخیرہ کرنے کا مجازنہ ہوگا۔صوبائی محکمہ خوراک نے گندم خریداری پالیسی 2020-21ء جاری کرتے ہوئے تمام فوڈ ڈویثرن کو ہدایت کی ہے کہ وہ گندم خریداری انتظامات 31مارچ تک مکمل کرلیں اور ہر ضلع کی سطح پر گندم کی کٹائی شروع ہونے کی صورت میں خریداری کا عمل بغیر کسی تاخیر کے شروع کردیا جائے۔محکمہ خوراک ملتان ڈویثرن نے مذکورہ گندم خریداری پالیسی کے تحت گندم خریداری انتظامات کو حتمی شکل دیدی ہے۔

قائم

مزید :

ملتان صفحہ آخر -