ترجمان سندھ پولیس نے محکمے میں ہونے والی تمام تقرریوں اور تبادلوں کی حقیقت کھول دی

ترجمان سندھ پولیس نے محکمے میں ہونے والی تمام تقرریوں اور تبادلوں کی حقیقت ...
ترجمان سندھ پولیس نے محکمے میں ہونے والی تمام تقرریوں اور تبادلوں کی حقیقت کھول دی

  

کراچی(ڈیلی پاکستان آن لائن)ترجمان سندھ پولیس نےدفترسے جاری اعلامیئے میں بتایا ہے کہ سندھ پولیس میں تمام تقرریاں او ر تبادلے میرٹ کی بنیاد پرکئے جاتے ہیں۔

تفصیلات کےمطابق ترجمان سندھ پولیس کا کہنا تھا کہ چند روز قبل ڈی آئی جی سٹیبلشمنٹ برانچ سینٹر ل پولیس آفس کی جانب سے انتظامی سطح پر171انسپکٹرز کے مجموعی طور پر تبادلوں کے احکامات جاری کئے گئے تھےجسےسوشل میڈیا پر ایک غلط تاثر دیکر بلاجواز اورغیر ضروری طور پر متنازعہ بنانے کی کوشش کی گئی لہٰذااس منفی رجحان اور من گھڑت تاثرکی محکمانہ سطح پر تردید اوروضاحت ضروری ہے۔انہوں نے کہا کہ  تبادلوں کے پس پردہ مقصد اور وجہ کچھ اور تھی، حقیقت یہ ہے کہ سندھ پولیس میں سب انسپکٹرزسے انسپکٹرز کے عہدوں پر بروقت ترقیاں کی گئیں،ترقی پانے والے تمام انسپکٹرزکوسندھ کے مختلف رینجز میں تعینات کرنے کی ضرورت تھی تاکہ سروس رولز کے مطابق نئے اسکیل میں انکی تنخواہوں کی ادائیگیوں کے عمل کا آغاز کیا جاسکے۔لاڑکانہ، سکھر،میرپور خاص، شہید بینظیر آباد اور حیدرآبادپولیس رینجز میں اتنی آسامیاں خالی نہیں تھی کہ انہیں انکی متعلقہ رینجز سے تنخواہوں کی ادائیگیاں کی جاتیں،صرف کراچی رینج اور سندھ پولیس کے دیگر یونٹس میں ہی خالی آسامیاں تھیں تاہم مذکورہ مجموعی عمل میں متعلقہ ڈی آئی جیز کے احکامات کوبھی ملحوظ خاطر رکھا گیا تھا۔

ترجمان نے مزید بتایا کہ مذکورہ انسپکٹرز کے تبادلوں کے احکامات صر ف اورصرف انتظامی بنیادوں پرکئے گئے اوران احکامات کو منفی رنگ دیناحقائق کے برخلاف ہے تاہم تبادلوں کے ان احکامات کو فی الوقت معطل کردیا گیا ہے اوراس پرمزیدغورو خوض کے بعدتمام انتظامی پہلوؤں کا ازسرنوجائزہ لیکرنافذ العمل کیاجائیگا۔میڈیا کے تمام دوستوں سے گزارش ہے کہ اس سلسلے میں افواہوں سے گریز کیا جائے۔

مزید :

علاقائی -سندھ -کراچی -