نیب کے پاس بڑی مچھلیوں کی اربوں روپے کی بد عنوانی اورمنی لانڈرنگ  کے ٹھوس ثبوت موجود ہیں: جسٹس جاوید اقبال 

نیب کے پاس بڑی مچھلیوں کی اربوں روپے کی بد عنوانی اورمنی لانڈرنگ  کے ٹھوس ...
نیب کے پاس بڑی مچھلیوں کی اربوں روپے کی بد عنوانی اورمنی لانڈرنگ  کے ٹھوس ثبوت موجود ہیں: جسٹس جاوید اقبال 

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن)قومی احتساب بیورو(نیب) کے چیئرمین جسٹس(ر)جاوید اقبال نےکہاہےکہ نیب کےپاس بڑی مچھلیوں کی اربوں روپے کی بد عنوانی اورمنی لانڈرنگ  کے ٹھوس ثبوت موجود ہیں، نیب نے معزز حتساب عدالتوں میں قانون کے مطا بق بدعنوانی کے 1230 ریفرنس دائر کئے ہیں جو کہ زیر سماعت ہیں۔

اپنے بیان میں  جسٹس(ر)جاوید اقبال نے کہاکہ بابائے قوم قائد اعظم محمد علی جناحؒ نے اسمبلی میں اپنے خطاب میں اقربا پروری اور رشوت ستانی کو بڑی برائی قرار دیا۔انہوں نے کہا کہ وائٹ کالر کرائمز اور سٹریٹ کرائم میں فرق ہے،میگا کرپشن مقدمات کو منطقی انجام تک پہنچانا نیب کی اولین ترجیح ہے،نیب اقوام متحدہ کےانسدادبدعنوانی کنونشن کےتحت پاکستان کا فوکل ادارہ ہے،پاکستان سارک اینٹی کرپشن فورم کاچئیر مین ہے،نیب سارک ممالک کےلئےرول ماڈل کی حیثیت رکھتا ہے،عالمی اقتصادی فورم،ٹرانسپیرنسی انٹرنیشنل پاکستان،پلڈاٹ،مشال پاکستان نے نیب کی انسداد بدعنوانی کی کوششوں کو سراہا ہے۔

انہوں نے کہا کہ نیب نے اپنے قیام سے اب تک 714ارب روپے قومی خزانے میں جمع کروائے ہیں جو کہ نمایاں کامیابی ہے،نیب نے سینئیر سپروائزری سٹاف کی اجتماعی دانش سےفائدہ اٹھانےکےلئےمشترکہ تحقیقاتی ٹیم کا نظام وضع کیا ہے،اس میں ڈائریکٹر،ایڈیشنل ڈائریکٹر،انویسٹی گیشن آفیسر،لیگل قونصل ، مالیاتی اور لینڈ ریونیو کے ماہرین شامل ہیں، نیب افسران قانون کے مطابق عزم و ہمت سے کام کر رہے ہیں،نیب وائٹ کالر میگاکرپشن کیسز کی تحقیقات کے لے پر عزم ہے، آٹا اور چینی سیکنڈل کو  بھی منطقی انجام تک پہنچایا جائے گا۔

مزید :

علاقائی -اسلام آباد -