صوبہ بھر میں اتائیوں کیخلاف کریک ڈاؤن‘ 75 مراکز سیل‘ بھاری جرمانے 

صوبہ بھر میں اتائیوں کیخلاف کریک ڈاؤن‘ 75 مراکز سیل‘ بھاری جرمانے 

  

ملتان(وقا ئع نگار)پنجاب ہیلتھ کیئر کمیشن نے گذشتہ ہفتے میں صوبہ کے مختلف شہروں میں اتائیوں کے خلاف کارروائی کرکے  75مراکز سیل کر دیے ہیں۔جن میں دندان ساز،میڈیسن سٹورز،لیبارٹریز،عینک ساز،میٹرنٹی ہومز وغیرہ کے علاوہ ان حکیموں اور ہومیو(بقیہ نمبر17صفحہ 6پر)

پیتھک ڈاکٹروں کی وہ علاجگاہیں بھی شامل ہیں.جو ایلوپیتھک طریقہ سے علاج کرتے ہوئے پائے گئے۔جبکہ سب سے بڑی تعداد ان اتائیوں کی تھی جو خودکو جنرل فزیشن ظاہر کر کے لوگوں کا علاج کررہے تھے۔اعدادوشمار کے مطابق کی گئی کارروائیوں میں 589 علاجگاہوں پر چھاپے مارے گئے اوران میں سے 207اتائیت کے مراکز پر کاروبار تبدیل پائے گئے۔مزید برآں ان میں سے 27مراکز ایسے تھے جہاں پر مستند معالجین نے علاج معالجہ کی سہولیات فراہم کرنا شروع کر دی ہیں۔اورکمیشن نے مزید266 علاجگاہوں کی نگرانی بھی شروع کر دی گئی ہے۔جہاں پر چھاپوں کے وقت مستند معالجین کام کر رہے تھے۔دوسری جانب بند کیے گئے اڈوں میں سب سے زیادہ میانوالی میں 13 وہاڑی 12 لاہور،سیالکوٹ اور لودھراں ہر ایک میں 11،راولپنڈی 10،منڈی بہاالدین اور شیخوپورہ ہرایک میں تین اور حافظ آباد میں ایک شامل ہے۔لاہور میں علی میٹرنٹی ہوم،ڈینٹل سکوائر،بخاری میڈیکل کمپلیکس،فخری کلینک،شہزاد ڈینٹل لیب،ریاض ہومیوپیتھک کلینک،وارث کلینک،عارف کلینک،تمثیل ڈینٹل کلینک،بلو کلینک اور رزاق کلینک سربمہر کیے گئے ہیں۔پنجاب ہیلتھ کمیشن نے اب تک تقریبا 96 ہزار علاجگاہوں پر چھاپے مار کر31ہزار سے زائد اتائیت کے اڈے سیل کیے ہیں اورانھیں تقریبا 66کروڑروپے جرمانہ بھی کیا گیا ہے۔

بھاری جرمانے

مزید :

ملتان صفحہ آخر -