قتل کی وارداتوں میں 20فیصد کمی واقع ہو گئی ہے: پی ڈی او مردان

      قتل کی وارداتوں میں 20فیصد کمی واقع ہو گئی ہے: پی ڈی او مردان

  

 مردان (بیورورپورٹ) ڈی پی او ڈاکٹر زاہدا للہ خان نے کہاہے کہ قتل کی وارداتوں میں بیس فیصد کمی آچکی ہے،بغدادہ کے نوجوان قتل کیس کا سراغ لگادیاگیاہے جلد سب کچھ میڈیا کے سامنے پیش کیاجائے گا وہ سینئر صحافیوں سے گفتگو کررہے تھے انہوں نے کہاکہ ٹریفک حکام کو ہدایات دی گئی ہیں کہ وہ غریب رکشہ ڈرائیوروں پر زیادہ جرمانہ لگانے سے اجنتاب کریں شہر کے اہم شاہراہوں پر بے جا یوٹرن کے خاتمے کے لئے متعلقہ اداروں سے مل کر اقدامات اٹھائے جائیں گے انہوں نے کہاکہ سیف سٹی پراجیکٹ کے دورس نتائج سامنے آئے ہیں اور پراجیکٹ کے تحت شہر کے شاہراہوں میں لگے کیمروں کی مدد سے جرائم کی روک تھام اور ٹریفک نظام کو کنٹرول کرنے میں مدد مل رہی ہے انہوں نے کہاکہ کیمروں کی تعداد ر وقت کے ساتھ ساتھ بڑھائی جائی گی ڈی پی او نے کہاکہ مردان صوبے کا دوسرا بڑا شہر ہے اور دیگر اضلاع کے مقابلے میں یہاں کی مجموعی امن امان کی صورت حال بہتر ہے ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہاکہ گذشتہ روزپوھان کالونی میں قتل ہونے والے نوجوان کا واقعہ ٹارگٹ کلنگ نہیں تھا بلکہ پولیس واردات کی تہہ تک پہنچ چکی ہے ملزمان کا سراغ لگادیاگیاہے اوربہت جلد سب کچھ میڈیا کے سامنے پیش کیاجائے گا انہوں نے کہاکہ رواں سال کے تین مہینوں کا موازانہ گذشتہ سے کیاجائے تو قتل کی وارداتوں میں بیس فیصد کمی آچکی ہے امن امان کی بحالی میں ڈی آرسیز کے ساتھ ساتھ مقامی مشران کا کردار اہم ہے اوران کی کوششوں سے زیادہ تر دشمنیوں میں راضی نامے کئے جاچکے ہیں۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -