پولیس سے مذاکرات ناکام، جیل روڈ پر لیڈی ہیلتھ ورکرز کا دھرنا جاری، ٹریفک کا نظام درہم برہم شہریوں کو مشکلات کا سامنا

پولیس سے مذاکرات ناکام، جیل روڈ پر لیڈی ہیلتھ ورکرز کا دھرنا جاری، ٹریفک کا ...

  

 لاہور(کرائم رپورٹر،فلم رپورٹر) جیل روڈ پر لاہور کالج ویمن یونیورسٹی کے مقابل پنجاب بھر کی لیڈی ہیلتھ ورکرز کا دھرنا،کئی کم سن بچے بھی ماؤں کیساتھ دھرنے میں شریک ہوئے، دھرنے میں سب نے مل کر دوپہر کا کھانا کھایا۔ لیڈ ی ہیلتھ ورکرز کا کہنا تھا وہ مطالبات کی منظوری تک یہاں سے نہیں جائیں گی،لیڈی ہیلتھ ورکرز وقفے وقفے سے اپنے مطالبات کے حق میں نعرے بازی کرتی رہیں۔مظاہرین نے مطالبہ کیا سروس سٹرکچر منظور، سکیل اَپ گریڈ اور دیگر سرکاری اداروں کے ملازمین کی طرح مراعات دی جائیں،دھرنے کے باعث جیل روڈ اور ملحقہ سڑکوں پر ٹریفک کا نظام درہم برہم ہوگیا، طلباء و طالبات کے علاوہ دفاتر اور کاروبار کے سلسلے میں آنے جانیوالے افراد کو بھی شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑ ا۔لیڈی ہیلتھ ورکرز کا کہنا تھا وہ مطالبات کی منظوری تک یہاں سے نہیں جائیں گی۔دھرنا دینے والی یہ خواتین کھانے کے برتن بھی ساتھ لائی تھیں۔اس موقع پر لیڈی ہیلتھ ورکرز کی نمائندہ خواتین زاہدہ،طاہرہ کلثوم سمیت دیگر کا کہنا تھا کہ ہمارے ڈیوٹی اوقات کار میں فوری تبدیلی کی جائے ہماری تنخواہوں میں 125فیصد تک اضافہ کیا جائے اور ان کا سروس سکیل بھی 5سے بڑھا کر 7کیا جائے اگر ایسا نہیں ہوا تو پولیو،ٹائیفائڈ،ڈینگی سمیت ہر مہم کا بائیکاٹ کیا جائے گا۔وزیر اعظم عمران خان کہاں ہیں ان کو معلوم نہیں کہ مہنگائی کے اس دور میں انتہائی کم تنخواہ میں گذارا کرنا کتنا مشکل ہے۔ پولیس نے ایس پی سول لائنز رضا صفدر کاظمی کی قیادت میں دھرنا قائدین سے مذاکرات کئے لیکن ان کو کسی قسم کی کامیابی نہیں مل سکی۔

 ہیلتھ ورکرزدھرنا

مزید :

صفحہ اول -