فارن فنڈنگ کیس میں حکومت ایک دن بھی نہیں رہ سکتی، شاہد خاقان عباسی

فارن فنڈنگ کیس میں حکومت ایک دن بھی نہیں رہ سکتی، شاہد خاقان عباسی
فارن فنڈنگ کیس میں حکومت ایک دن بھی نہیں رہ سکتی، شاہد خاقان عباسی

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن) مسلم لیگ ن کے رہنما اور سابق وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی کا کہنا ہے کہ فارن فنڈنگ کیس میں حکومت ایک دن بھی نہیں رہ سکتی۔

احتساب عدالت میں پیشی کے موقع پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے شاہد خاقان عباسی کا کہناتھاکہ حکومت جانتی ہے کہ الیکشن کمیشن کی جانب سے فارن فنڈنگ کیس میں کیافیصلہ آنا ہے، عمرا ن خان نے فنڈنگ کے نام پر ملنے والے کروڑوں روپے اپنی جیب میں ڈالے اس لئے وہ جانتے ہیں کہ اس کیس میں فیصلہ ان کے خلاف آئے گا۔شاہد خاقان کا کہنا تھا کہ حکومت خائف ہے اس لئے وفاقی کابینہ الیکشن کمیشن پر چڑھ دوڑی ہے۔ حفیظ شیخ کو ووٹ حکومتی نمائندوں نے نہیں دیئے کیوں کہ ان نمائندوں سے عوام کہتی ہے کہ حکومت نا کام ہوچکی ہے مگر یہ حفیظ شیخ کی ہار کا بوجھ بھی الیکشن کمیشن پر ڈال رہے ہیں۔

چیئرمین سینیٹ کے الیکشن پر گفتگو کرتے ہوئے سابق وزیر اعظم نے کہا کہ ڈسکہ الیکشن کی طرح چیئرمین سینیٹ کا الیکشن چوری کیا گیا،ڈسکہ الیکشن میں حکومت نے 20سے زائد پریزائیڈنگ آفیسر ووٹوں سمیت اٹھائے، آج تک نہیں پتا چل سکا کہ ان پریزائیڈنگ آفیسرکو کس نے اٹھایا، تاریخ میں پہلی بار ہوا کہ انتخاب سے قبل سینیٹ ہال میں خفیہ کیمرے لگائے گئے، ان کا کہنا تھا کہ چیئرمین سینیٹ صادق سنجرانی کی زیر نگرانی خفیہ کیمرے لگائے گے،اخلاقی قدریں ہوتی تو چیئرمین سینیٹ اپنی ہار تسلیم کرتے ہوئے گھر چلے جاتے، چیئرمین سینیٹ اور وزیر اعظم کی بدنصیبی ہے کہ پارلیمان کی روایات سے زیا دہ انہوں نے کرسی کو اہمیت دی۔ لیگی رہنماکا کہنا تھا کہ جب ملک کے حکمران چور ہوں تو اداروں پر چڑھ دوڑتے ہیں، ایک دن آئے گا جب یہ لوگ اپنے لانے والوں کے خلاف ہی چڑھ دوڑیں گے۔

مزید :

قومی -علاقائی -اسلام آباد -