فارن فنڈنگ کیس، الیکشن کمیشن کا پی ٹی آئی کو نوٹس جاری کرنے کا فیصلہ، سکروٹنی کمیٹی سے رپورٹ طلب

فارن فنڈنگ کیس، الیکشن کمیشن کا پی ٹی آئی کو نوٹس جاری کرنے کا فیصلہ، سکروٹنی ...
فارن فنڈنگ کیس، الیکشن کمیشن کا پی ٹی آئی کو نوٹس جاری کرنے کا فیصلہ، سکروٹنی کمیٹی سے رپورٹ طلب

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)فارن فنڈنگ کیس میں الیکشن کمیشن نے پاکستان تحریک انصاف کو نوٹس جاری کرنے کا فیصلہ کرتے ہوئے سکروٹنی کمیٹی سے رپورٹ طلب کرلی۔ 

تفصیلات کے مطابق الیکشن کمیشن میں فارن فنڈنگ کیس سکروٹنی کمیٹی سے متعلق اکبر ایس بابر کی درخواست پرممبر خیبر پختونخوا ارشاد قیصر کی سربراہی میں تین رکنی بینچ نے سماعت کی۔سماعت کے دوران اکبر ایس بابر کی جانب سے ان کے وکیل احمد حسن نے دلا ئل دیتے ہوئے کہا پی ٹی آئی کے عہدیدار نے اعتراف کیا ان کے ملازمین کے اکاؤنٹس میں باہر سے فنڈز آئے۔ وکیل احمد حسن کا کہنا تھا کہ پی ٹی آئی کے بیرون ملک اکاؤنٹس کی تفصیلات جمع ہیں تو فراہم کریں۔ممبر الیکشن کمیشن ارشاد قیصر نے استفسار کیا کہ کیا کمیٹی نے خود کوئی ریکارڈ اکٹھا کیا،جس پر اکبر ایس بابر وکیل نے کہا کہ ثبوتوں کے جواب میں پی ٹی آئی کا ریکارڈ کیوں خفیہ رکھا جارہاہے،پی ٹی آئی ریکارڈ خفیہ رکھنا غیر قانونی ہے۔ ہم نے الیکشن کمیشن کو یقین دہانی کروائی کہ میٹریل کا غلط استعمال نہیں کیا جائے گا۔ان کا کہنا تھا کہ سکروٹنی کمیٹی میں پیش ریکارڈ تک رسائی ہمارا قانونی حق ہے،کمیٹی اس لئے دستاویز فراہم نہیں کررہی ہے کیوں کہ ایک جماعت ناراض ہوتی ہے۔ الیکشن کمیشن نے کیس کی سماعت 22مارچ تک ملتوی کرتے ہوئے آئندہ سماعت پر سکروٹنی کمیٹی سے رپورٹ طلب کرلی۔

مزید :

قومی -علاقائی -اسلام آباد -